چیف سیکریٹری نے نبارڈ کے تحت جاری پروجیکٹوں پر کام کی رفتار کا جائیزہ لیا

 سرینگر//چیف سیکریٹری بی بی ویاس نے کل پہلی ہائی پاورڈ کمیٹی برائے سال2017-18 کی میٹنگ کی صدارت کی جس کا انعقاد نبارڈ کے رورل انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ فنڈ کے تحت جاری پروجیکٹوں کا جائیزہ لینے کے لئے کیا گیا تھا۔میٹنگ میں پرنسپل سیکرٹری زرعی پیداوار، وزیر اعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری، کمشنر سیکرٹری تعمیرات عامہ، کمشنر سیکرٹری بھیڑ و پشو پالن، کمشنر سیکرٹری صحت عامہ آبپاشی و فلڈ کنٹرول ، چیف جنرل منیجر نبارڈ اور دیگر اعلیٰ افسران موجود تھے۔میٹنگ کو مطلع کیا گیا کہ آر آئی ڈی ایف کے تحت سال2017-18 کیلئے تعمیرات عامہ، صحت عامہ، آبپاشی و فلڈ کنٹرول، صحت، پشو وبھیٹر پالن اور زرعی شعبوں کے پروجیکٹوں کے لئے 400 کروڑ روپے منظور کئے گئے ہیں۔کمیٹی نے کنڈی علاقوں میں آبپاشی سہولیات اور روائتی آبگاہوں، فلڈ چینلوں کی بحالی اور رنگ روڈز کے ساتھ ساتھ ویئر ہاؤس سہولیات کے قیام سے متعلق اختراعی پروجیکٹوں کے لئے جامع پروجیکٹ رپورٹ اور پروجیکٹوں کی تکمیل کی رپورٹ تیار اور پیش کرنے کے لئے15 ستمبر2017 کی ڈیڈ لائین مقرر کی ہے۔چیف سیکرٹری نے تعمیراتی ایجنسیوں کو تمام پروجیکٹوں پر کام میں سرعت لاکر2017-18 کے اندر مکمل کرنے کی ہدایت دی۔ چیف سیکرٹری نے انتظامی سیکرٹریوں کو ذاتی طور پروجیکٹوں پر جاری کام کا ماہانہ بنیاد پر جائیزہ لیں اور پروجیکٹ کی تکمیل سے متعلق رپورٹ حکومت ہند کو بروقت پیش کرنے کو یقینی بنانے کی ہدایت دی۔انہوں نے متعلقہ انتظامی سیکرٹریوں کو نبارڈ کے تحت جاری پروجیکٹوں کو متعلقہ محکمہ کے ویب سائٹس پر تصاویر سمیت اپ لوڈ کرنے کے لئے کہا اور نبارڈ املاک کی جیو ٹیگنگ کے امکانات کو بھی بروئے کار لانے کے لئے بھی کہا۔کمیٹی کا اگلا اجلاس اکتوبر2017 کے پہلے ہفتے میں منعقد کیا جائے گا۔