چیف سیکرٹری نے محکمہ دیہی ترقی کے کام کاج کا جائزہ لیا پائیدار صفائی یقینی بنائی جائے || ڈلو کی کچرے اور فضلہ کو جمع کرنے کیلئے ہر گائوں میں معقول انتظامات کرنے کی تلقین

 عظمیٰ نیوز سروس

 

جموں//چیف سیکرٹری اتل ڈلو نے جمعہ کو دیہی ترقی کے محکمے کے کام کاج کا جائزہ لیتے ہوئے اس بات کو یقینی بنانے پر زور دیا کہ گاؤں کی صفائی کیلئے اٹھائے گئے اقدامات زمینی سطح پر پائیدار اور موثر ثابت ہوں ۔ ڈلو نے کہا کہ صفائی ( سوچھتا ) قومی سطح پر اولین ترجیحات میں سے ایک ہے جس کی خود وزیر اعظم نے حمایت کی ہے ۔ انہوں نے ثابت کیا کہ اس ملک گیر مہم کو ایک تحریک میں تبدیل کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ اس کے فوائد نچلی سطح کے لوگوں کیلئے بیش قیمتی ہیں ۔ انہوں نے محکمہ پر زور دیا کہ وہ اس مہم کو آگے بڑھائے اور اس بات کو یقینی بنائے کہ +ODF ماڈل زمرے میں صفائی کے معیارات جو کہ جے اینڈ کے نے حاصل کئے ہیں ، یو ٹی میں کہیں بھی کم نہ ہوں۔ انہوں نے یو ٹی کے تمام دیہاتوں کیلئے محکمہ کے ذریعہ اس کا مسلسل جائیزہ لینے کی ہدایت دی تا کہ اسے ہمیشہ برقرار رکھا جا سکے ۔ چیف سیکرٹری نے مزید کہا کہ دیہی علاقوں میں گھر گھر کچرے کو جمع کرنے اور الگ کرنے کی نگرانی کی جائے گی تا کہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ اس کام پر معمور ایجنسیاں یا افراد شیڈول اور مقررہ معیار کے مطابق کام کر رہے ہیں ۔

 

انہوں نے اس مقصد کیلئے دیہات میں یوزر چارجز کی وصولی اور اس مشق کو بروقت پائیدار بنانے کے طریقے تلاش کرنے کیلئے کہا ۔ این آر ایل ایم کے بارے میں چیف سیکرٹری نے کہا کہ خواتین کو بااختیار بنانا قومی سطح پر ایک اور توجہ کا مرکز ہے اور وزیر اعظم کیلئے بھی تشویش کا باعث ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دیہی خواتین کو مواقع میں تبدیل کرنے کیلئے تمام تر تربیت دی جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ یہ خواتین اتنی تخلیقی ہیں کہ ایک بار جب انہیں اپنی سہولت کے مطابق انہیں قائم کرنے اور پھلنے پھولنے کی آزادی دی جاتی ہے تو وہ اپنے کاروباری اداروں کی قدر میں اضافہ کرتی رہیں ۔ انہوں نے صلاحیت کی تعمیر کے ذریعے ان کی حوصلہ افزائی کرنے اور مشن کی طرف سے فراہم کردہ کمیونٹی ریسورس پرسن کے موثر استعمال کے ذریعے اپنے کیڈر کو مضبوط کرنے کا مشورہ دیا ۔ انہوں نے ان ریسورس پرسنز کیلئے دور دراز مقامات کا دورہ کرنے کو باقاعدہ مشق بنانے پر زور دیا تا کہ وہاں کی خواتین میں اپنی توانائیوں کو کامیاب کاروباری اداروں میں منتقل کرنے کیلئے مثبت تحریک پیدا کی جا سکے ۔ دیگر اسکیموں کے بارے میں مسٹر ڈلو نے ایم جی نریگا کے کاموں کو انجام دینے میں نیشنل موبائل مانیٹرنگ سسٹم ( این ایم ایم ایس ) پر سختی سے عمل کرنے پر زور دیا ۔ انہوں نے آنے والے مالی سال کے دوران کنور جن کے تحت اٹھائے گئے تمام ٹارگٹڈ کاموں کو مقررہ وقت میں مکمل کرنے کو کہا ۔ انہوں نے پی ایم اے وائی کے تحت مکمل ہونے والے مکانات کا بھی نوٹس لیا اور محکمہ سے کہا کہ وہ اس بات کو یقینی بنائے کہ یہاں تمام بے گھر افراد کی رہائش کی ضروریات پوری ہوں ۔ انہوں نے بیک ٹو ولیج ڈیٹا کو ڈیجیٹائز کرنے کے ساتھ ساتھ ایک طریقہ کار وضع کرنے کیلئے کہا تا کہ اسے عوام اور انتظامیہ کے درمیان ایک سال کی طویل ڈیمانڈ بڑھانے اور انٹر فیس بنایا جا سکے ۔ میٹنگ کے دوران چیف سیکرٹری نے محکمہ کی طرف سے پیش کی جانے والی آن لائن خدمات کا جائیزہ لیا ۔ انہوں نے مختلف شعبوں میں ان کی کارکردگی کے بارے میں دریافت کیا ۔ کمشنر سیکرٹری آر ڈی ڈی مندیپ کور نے محکمہ کی طرف سے یہاں نافذ تمام سکیموں اور پروجیکٹوں کی مجموعی صورتحال پیش کی ۔