چھجلہ ۔کُرلا واٹر سپلائی سکیم 9ماہ سے مکمل بند

مینڈھر //مینڈھر سب ڈویژن کے سرحدی علاقہ چھجلہ میں واٹر سپلائی سکیم گزشتہ 9ماہ سے مکمل بند ہونے کی وجہ سے عام لوگوں کو پینے کے صاف پانی کی شدید قلت کا سامنا کرناپڑرہا ہے ۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ چھجلہ تا کُرلا واٹر سپلائی سکیم گزشتہ کئی ماہ سے مکمل بند ہے لیکن محکمہ کے آفیسران و ملازمین اس کی بحالی کیلئے انتہائی غیر سنجیدہ ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ موسم خشک رہنے کیساتھ ساتھ علاقہ میں زیادہ تعداد میں قدرتی چشمے بھی موجود نہیں ہیں جس کی وجہ سے پینے کی فراہمی مکینوں کیلئے ایک بڑی مصیبت بن چکی ہے ۔غور طلب ہے کہ مذکورہ واٹر سپلائی سکیم کی مدد سے چھجلہ کے کئی دیہات میں پینے کا صاف پانی سپلائی کیا جار ہا تھا لیکن اس کے بند ہونے کے بعد لوگ بالخصوص خواتین پینے کے صاف پانی کیلئے قدرتی چشموں پر کوئی گھنٹوں تک پانی بھرنے کیلئے اپنی باری کا انتظار کرنے پر مجبور ہیں ۔لوگوں نے بتایا کہ پانی کی شدید قلت کی وجہ سے گھروں کیساتھ ساتھ مساجد میں استعمال کیلئے پانی جیسی سہولیات دستیاب نہیں ہیں ۔مقامی سرپنچ محمد شفیع چوہان نے بتایا کہ پانی کی سپلائی بحال کرنے کیلئے متعلقہ محکمہ ،مقامی انتظامیہ کیساتھ ساتھ ضلع انتظامیہ پونچھ کو بھی پانی کی شدید قلت کے بارے میں آگاہ کیا گیا لیکن صرف جھوٹی یقین دہانیوں کے بغیر کوئی عملی اقدامات نہیں اٹھا ئے گئے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ مساجد میں پانی کی شدید قلت کی وجہ سے ان نمازی مساجد کا رخ نہ کرنے پر مجبور ہیں ۔پنچایتی اراکین و مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ پانی کی سپلائی بحال کرنے کیلئے محکمہ کو ہدایت جاری کی جائیں ۔