چوتھے روزچیئرپرسن کا پکل ڈول تعمیراتی کمپنی کے خلاف احتجاج جاری | سبھی مطالبات کو تسلیم کرنے کے بعد ہی احتجاج ختم ہوگا: پوجا ٹھاکر

کشتواڑ//مقامی نوجوانوں کو پاور پروجیکٹوں میں روزگار فراہم کرنے اور آر آر پلان کی ادائیگی کو لیکر ٹھٹھرتی سردی میںضلع ترقیاتی کونسل کی چیئرپرسن اور انکے ہمراہ ڈی ڈی سی ممبر ناگسینی فیصل ، سرپنچ بابو لال و چند مقامی لوگ دھرنے پر مسلسل چوتھے روز سے دھرنے پر بیٹھے ہیں۔کمپنی کے مزدروں ودیگر ورکروں کو جمعہ کی شام دوبارہ سے پروجیکٹ سائٹ پر کام کرنے کو کہا گیااور احتیاتی طور پر کورونا پروٹوکول کو مدنظر رکھتے ہوئے احتجاج میں چند لوگوں کو ہی بیٹھنے کیلئے کہاگیا تاکہ کورونا کو مزید پھیلنے سے روکا جاسکے۔ضلع ترقیاتی کونسل کی چیئرپرسن پوجا ٹھاکر نے بتایا کہ جب تک نہ انکے سبھی مطالبات کو کمپنی و انتظامیہ تسلیم نہ کرے ،اُس وقت تک احتجاج جاری رہے گا۔ان کا کہناتھا کہ اس سے قبل بھی انہوںنے تین روز تک احتجاج کیا تھا اور اس وقت انہیں یقین دہانی کرائی گی تھی کہ پندرہ روز کے اندر سبھی مطالبات کو منظور کیا جائے گا لیکن چھ ماہ کا عرصہ گزرجانے کے بعد بھی حالات جوںکے توں ہیں جبکہ نہ ہی کمپنی اورنہ ہی انتظامیہ انکے مطالبات کو تسلیم کررہی ہے جسکے سبب وہ مجبور ہوکر احتجاج کررہے ہیں۔انہوںنے کہا کہ مقامی لوگوں کو روزگار سے محروم رکھ کرباہر سے لوگوں کو لگایا جارہا ہے جسے بالکل برداشت نہیں کیا جائے گا ۔ بدھوار کی صبح شروع کیا گیا احتجاج سنیچر کی دیر شام تک جاری تھا اوربقول ٹھاکر سبھی مطالبات کو تسلیم کئے جانے کے بعدہی احتجاج ختم کیا جائے گا۔