چنائو مودی کو تیسری بار وزیر اعظم بنانے کا پاکستان میں اب بھارت کی طرف آنکھ اُٹھانے کی بھی ہمت نہیں:شاہ

یواین آئی

جونپور// مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے اتوار کو کہا کہ یہ الیکشن نریندر مودی کو تیسری بار وزیر اعظم بنانے کا ہے۔ہندوستان کو دنیا کی تیسری معاشی قوت بنانے کے لئے نریندر مودی کو تیسری بار وزیر اعظم بنانا ضروری ہے۔ضلع میں مچھلی شہر(محفوظ) لوک سبھا حلقے میں مڑیاہوں اسمبلی حلقے کے رام لیلا میدان میں بی جیپی امیدوار و ایم پی بی پی سروج کے لئے ووٹ کی اپیل کرتے ہوئے شاہ نے کہا کہ مودی نے ملک کی معیشت کو 11ویں مقام سے پانچویں مقام پر لائے ہیں۔ یہ الیکشن ہندوستان کو دنیا کی تیسری معیشت بنانے کا ہے۔ دہشت گردی سے پاک کرنا ہے اور پاکستان کو منھ توڑ جواب دینا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس بار نریندر مودی 400سیٹوں سے بہت آگے نکل رہے ہیں۔ یہ الیکشن نریندر مودی کو تیسری بار وزیر اعظم بنانے کا الیکشن ہے۔ انہوں نے کہا70سال سے کانگریس رام مندر کے مسئلے کو بھٹکا رہی تھی۔ لٹکا رہی تھی۔آپ نے دوسری بار مودی جی کو وزیر اعظم بنایا اور 22جنوری کو پران پرتشٹھا ہوئی۔اپوزیشن کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا کہ یہ لوگ خوشامد کی سیاست کرتے ہیں۔ یہ کشمیر ہمارا ہے یا نہیں اترپردیش اور راجستھان والوں کا کشمیر سے کیا لینا دینا، یہ کہتے تھے لیکن مڑیاوں کا بچہ۔ بچہ میرے کشمیر کے لئے جان دینے کو تیار ہے۔انہوں نے کہا کہ آج مودی حکومت میں پاکستان کی کچھ بھی غلط کرنے کی ہمت نہیں ہے۔ جبکہ یہی پاکستان کانگریس حکومت میں آئے دن کوئی نہ کوئی واردات کرتا رہتا تھا۔ اس نے پلوامہ حملہ کر کے ایک بھول کردی تھی جس کا جواب اتنا سخت دیا گیا کہ آج تک اس کی ہمت نہیں پڑرہی ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ الیکشن نریندر مودی کو تیسری بار وزیر اعظم بنانے کا ہے۔ اس کے ساتھ ہی کیرل سے لے کر کشمیر تک دہشت گردی کو ختم کرنے کا ہے چھتیس گڑھ کے نکسل واد کو ختم کرنے کا الیکشن ہے۔ اور پورے اترپردیش سے غنڈوں کو پاک کرنے کا الیکشن ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان کو دنیا کی تیسری معاشی طاقت بنانے کے لئے مودی کو تیسری بار اعظم بنانا ضروری ہے۔شاہ نے کہا کہ کیا شرد پوار، ممتا بنرجی، لالو یادو، راہل گاندھی وزیرا عظم کے عہدے کے لائق ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس کے لوگ جھوٹ پھلار ہی ہے کہ مودی اقتدار میں آئے تو ریزرویشن ختم کردیں گے۔ تلنگانہ اور کرناٹک میں ان لوگوں نے مسلم کو ریزرویشن دیا جو او بی سی کا تھا۔