چلی پنگل کے جاب کارڈ ہولڈرس کا احتجاجی مظاہرہ

 گندو//سابق سرپنچ پنچائت چلی بالا منیر احمد شیخ کی قیادت میں دیہی ترقی بلاک چلی پنگل کے درجنوںجاب کارڈ ہولڈرس نے گذشتہ چار برسوں سے اجرتوں کی عدمِ ادائیگی کے خلاف بی ڈی او چلی پنگل کے دفترکے سامنے ایک زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین کافی دیر تک ہم کیا چاہتے انصاف، بی ڈی او چلی ہائے ہائے ، منریگا اجرتوں کو واگذار کرو کے نعرے بلند کر  تے رہے ۔اس موقع پرمنیر احمد شیخ نے کہا کہ 2013سے لے کر تاحال جاب کارڈ ہولڈرس اجرتوں سے محروم ہیں جس کی وجہ سے انہیں مشکلات اور پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر کچھ چند لوگوں نے اپنے مفاد کی خاطر پنچائت چلی بالا کے تمام کاموں پر عدالت عالیہ سے روک لگوائی تھی تاہم دو ماہ قبل عدالت عالیہ نے محکمہ دیہی ترقی کے نام جاری حکمنامے میں ہدایت جاری کی تھی کہ منریگا  اورآئی اے وائی کے تحت غریب مزدوروں کو اجرتیں ان کے بنک کھاتوں میں جمع کرکے رپورٹ پیش کریں ۔لیکن محکمہ دیہی ترقی کے آفیسران وملازمین نے اس حکمنامہ پر عمل در آمد نہیں کیا جس کی وجہ سے غریب لوگوں کو مجبوراً سڑکو ںپر اترنا پڑا۔انہوں نے متعلقہ حکام کو متنبہ کیا کہ اگر عید سے پہلے پہلے ان کی اجرتوں کو واگذار نہیں کیا تو وہ مردوزن احتجاج پر اتر آئیں گے۔اس ضمن میں جب بلاک ڈیویلپمنٹ آفیسر چلی ادریس لون سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ پہلے پنچائت چلی بالا کا معاملہ کا عدالت عالیہ میں زیر سماعت رہا جس کی وجہ سے جاب کارڈ ہولڈروں میں اجرتیں ادا نہ ہوسکی۔تاہم بی ڈی او یقین دلایا کہ عید سے پہلے بقایا جات کو یقینی بنایا جائے گا۔