چرنڈا اوڑی میں رابطہ سڑک بند ہونے کا شاخسانہ

اوڑی /چرنڈہ اوڑی میں رابطہ سڑک بند ہونے کے سبب ایک جواں سال بیمار خاتون اسپتال وقت پر نہ پہنچنے سے لقمۂ اجل بن گئی۔ 25سالہ زرینہ بیگم زونہ نصیر احمد دیدڑکو بخار آیا اور علاقہ میں رابطہ سڑک بند ہونے کی وجہ سے اسے ہسپتال لے جانے کیلئے چارپائی پر ل جایاگیا۔ مقامی ذرائع کے مطابق اوڑی_ چرنڈہ سڑک 8 مارچ کو بارش کے بعد پسیاں گر آنے کی وجہ سے بند پڑی ہے اور دو ہفتے گذر جانے کے باوجود مگر محکمہ پی ایم جی وائے ایس نے اس رابطہ سڑک کو گاڑیوں کے لئے بحال نہیں کیا۔خاتون کے چچا نذیر احمد دیدڑ نے کہاکہ ’میری بھتیجی کو جمعرات کی صبح سخت بخار آیا اور علاقے کی رابطہ سڑک بند ہے اس لئے اْسے چار پائی پر لٹاکر اسپتال کی طرف لے جایا جا رہا تھا مگر اس کی موت راستے میں ہی واقع ہوئی‘۔انہوں نے الزام عاید کرتے ہوئے کہا کہ زرینہ کی موت کی ذمہ داری مبینہ طور پر محکمہ پی ایم جی ایس وائی پرہے۔انہوں نے کہا’’ اگر سڑک کو وقت پر بحال کیا گیا ہوتا تو ایک قیمتی جان کو بچایا جا سکتا تھا‘‘۔ایگزیکٹیو انجینئر پی ایم جی ایس وائی سب ڈویژن اوڑی پیر شاجہان نے اس ضمن میں کہا کہ علاقے میں زمین بارشوں کی وجہ سے بہت گیلی ہے اور پسیاں گر آنے کا عمل جاری ہے جسکی وجہ سے سڑک کی بحالی کیلئے کام کرنا مشکل ہے۔انہوں نے کہا کہ ’’ امید ہے کہ دو دنوں کے اندر رابطہ سڑک کو بحال کیا جائے گا‘‘۔