چار صوبے ہیں تو چار بیویاں بھی ہوں: بلاول

اسلام آباد// پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے چیئرمین اور پاکستان نیشنل اسمبلی کے ممبر بلاول بھٹو زرداری نے شادی کے بارے میں پوچھے گئے نامہ نگاروں کے سوال کا ایسا جواب دیا کہ سب حیرت میں پڑگئے اور ساتھ ہی اس برجستہ جواب سے پریس کانفرنس زعفران زار بن گئی۔مقامی میڈیا کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی نے ایک ویڈیو ٹوئٹ کیا ہے جس میں بلاول بھٹو صحافیوں سے بات چیت کررہے ہیں۔ ایک نامہ نگار مجید عباسی نے بلاول سے سوال کیا کہ ‘‘بے نظیر بھٹو (بلاول کی ماں) کا جو مشن تھا اس کو پورا کرنے کے لئے آپ نے جدوجہد کی ہے ۔ پاکستان کی عوام آپ کو دو طریقے سے دیکھنا چاہتی ہے ۔ ایک وزیراعظم کے طور پر اور ایک شادی کے لباس میں۔ آپ نے شادی کے سلسلے کوئی فیصلہ کیا ہے ؟ اور کیا وزیر اوعظم بننے سے پہلے شادی کریں گے یا وزیراعظم بننے کے بعد؟اس سوال کا جواب دیتے ہوئے مسٹر بلاول بھٹو نے کہا کہ ‘‘ ہاں اس تعلق سے سیاسی میٹنگیں ہورہی ہیں اور ہم صحیح وقت کے لئے منصوبہ تیار کررہے ہیں کہ الیکشن کے پہلے یا الیکشن کے بعد یا الیکشن مہم کے دوران یا الیکشن مہم سے پہلے ہم کب شادی کریں۔ ہم کیا ایک شادی کریں؟ یا چار صوبے ہیں تو ہر صوبے سے ایک بیوی ہونا چاہئے اور ا س کا الیکٹرول اثرات کیا ہوں گے ؟ جب ہماری یہ رپورٹ مکمل ہوجائے گی تو میں آپ کے سامنے پیش کروں گا۔’’مسٹر بلاول بھٹو کے اس جواب پر لوگوں نے زبردست قہقہہ لگایا۔واضح رہے کہ پاکستان میں چار صوبے ہیں۔ جن کے نام حسب ذیل ہیں۔ پختونخواہ، پنجاب ، سندھ اور بلوچستان ہیں۔ مسٹر بلاول بھٹو کی پیدائش 21 ستمبر 1988 کو ہوئی تھی۔ اب ان کی عمر 30 سال ہوچکی ہے اور انہوں نے اب تک شادی نہیں کی ہے ۔ وہ آکسفورڈ یونیورسٹی سے تعلیم یافتہ ہیں اور پاکستان کے سابق وزیراعظم بے نظیر بھٹو اور سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری کے بیٹے ہیں۔یو این آئی۔