پی ڈی پی ۔بی جے پی دور میں مڑواہ واڑون علاقے نظر انداز : سجاد کچلو

کشتواڑ//ایم ایل سی سجاد کچلو نے اپنے علاقہ کا پندرہ روزہ دورے مکمل کرنے کے بعد کہا کہ پی ڈی پی۔ بی جے پی مخلوط سرکار کے دور میں ریاست کے دور دراز علاقوں کو فراموش کیا گیا ہے جس کی زندہ مثال علاقہ مڑواہ اور واڑ ون ہے ،جہاں پر گورننس کا فقدان صاف صاف دکھائی دیتا ہے۔انہوں نے علاقہ کے عوام کی شکایت کا حوالہ دیکر کہا کہ 1200 میگا واٹ بر سر پائور پروجیکٹ سے علاقہ کی تقریباً 70 فی صدی آبادی بے گھر ہو تی ہے، جس کے لئے انہوں نے وزیر علیٰ کی ذاتی مداخلت طلب کی،تاکہ مڑواہ کے عوام کو بے گھر ہونے سے بچایا جائے۔انہوںنے کہا کہ یہ لوگ پروجیکٹ کے خلاف نہیں ہیں بلکہ یہ پروجیکٹ کی وجہ سے اپنا ہر کچھ یعنی کہ گھر، زمین ، و غیر منقولہ جائیداد کھونے کے لئے تیار نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ اس پروجیکٹ پر نظر ثانی کرنے کی اشد ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ لوگ بر سر پائور پروجیکٹ پر کافی وقت سے احتجاج کر رہے ہیں۔انہوں نے احتجاج کرنے والے لوگوں کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا ۔انہوں نے کہا کہ خستہ حال سڑکیں ،راشن کی قلت اور بنیادی طبی سہولیات کا فقدان دور دراز علاقوں کی ایک خاص بات ہے جس کا تدارک کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے الزام لگایا کہ دور دراز علاقوں کے لوگوں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے لئے کوئی بھی کنٹینجنسی پلان کا استعمال نہیں کیا گیا ہے۔انہوں نے علاقہ میں راشن کی قلت پر ناراضگی کا اظہار کیا ،انہوں نے مڑواہ میں بنیادی سہولیات فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ان لوگوں کو جروریات زندگی کی ناقص فراہمی سے کافی مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے سُکھنا آتشزنی متاثرین میںفی کنبہ26000 روپے120کنبوں میں تقسیم کی۔ دورہ کے دوران دونوں بلاک صدور غلام رسول ماگرے، غلام محمد ملک، غلام علی ،بشیر احمد رمضان ، محمد مرتضیٰ ،نذیر احمد، عبدالرزاق، محمد یوسف وانی، گلزار احمد وانی، فاروق احمد شان ، ولی محمد راتھر، لکھمی چند، سندیپ کمار، رادھا کرشن و دیگران ان کے ہمراہ تھے۔