پی ایم اے وائی سکیم کے تحت گھرو ں کی ’جیو ٹیگنگ‘ | کانگرھ گلہوتہ پنچایت کی متعدد وارڈوں کو نظر انداز کرنے کا الزام

مینڈھر //مینڈھر کی کانگڑھ گلہوتہ پنچایت کے مکینوں نے محکمہ دیہی ترقی کے ملازمین پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ انہوں نے پردھان منتری اواس یوجنا کے تحت ہونے والی ’جیو ٹیگنگ ‘کے عمل کے دوران پنچایت کی متعدد وارڈوں کو چھوڑ دیا ہے جس کی وجہ سے بڑی تعداد میں مستحقین مرکزی حکومت کی جانب سے چلائی جارہی سکیم سے محروم ہو گئے ہیں ۔انہوں نے بتایا کہ لگ بھگ ایک برس قبل گائوں میں ’جیو ٹیگنگ‘کا عمل شروع کیا گیا لیکن اکثر پنچایتوں کو نظر انداز کر دیا گیا جس کی وجہ سے گائوں میں رہائشی بی پی ایل زمرے کے مستحقین اس زمرے میں شامل ہی نہیں کئے گئے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ کے ملازمین پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ کی جانب سے مقامی ملازمین کو اس عمل کیلئے تعینات کیا گیا تھا تاہم مقامی ملازمین آپسی رنجش کی وجہ سے کئی گھروں کو نظر انداز کر دیتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ملازمین مبینہ طورپر رشوت لے کر لوگوں کو فائدہ پہنچانے کی کوشش میں رہتے ہیں جس کی وجہ سے مستحقین نظر انداز ہو جاتے ہیں ۔کانگڑھ گلہوتہ کے مکینوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ ’جیو ٹیگنگ‘کے عمل کے دوران مستحقین کو نظر انداز کر نے والے ملازمین کیخلاف سخت سے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے جبکہ اہل لوگوں کو فہرست میں شامل کر کے ان کو فلاحی سکیم کے تحت فائدہ پہنچایا جائے ۔