پہلی بار منگت تک گاڑی جائے گی

 
بانہال // قصہ بانہال سے منگت تک بنائے جانے والی رابطہ سڑک کی کھدائی مکمل کی گئی ہے اور اب پہلی بار گاڑی کے ذریعہ بانہال سے پچیس کلومیٹر دور مغرب میں واقع منگت پہنچا جا سکتا ہے۔ مقامی لوگوں نے اس رابطہ سڑک کو منگت ہرگام سے پرائمری ہیلتھ سینٹر منگت تک کا آدھا کلومیٹر کا مزید حصہ تعمیر کرنے کیلئے ممبر اسمبلی بانہال وقار رسول اور ڈپٹی کمشنر رام بن سے درمندانہ اپیل کی ہے۔ جس سلسلے میں ڈپٹی کمشنر رام بن شوکت ایجاز بٹ نے ایگریکٹیو انجینئر پی ایم جی ایس وائی کو مناسب کاروائی کرنے اور تفصیلی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت دی ہے۔ مقامی لوگوں کے ایک وفد نے پیر کو کشمیر عظمی کو بتایا کہ اب جبکہ نو سال کے طویل وقت کے بعد بانہال۔ منگت رابطہ سڑک کی کھدائی مکمل کی گئی ہے اور منگت تک اب گاڑی جانے کا خواب ستر سال بعد شرمندہ تعبیر ہوا ہے اب ہماری التجا ہے کہ منگت کے ہرگام سے اس سڑک کا دائرہ مزید آدھا کلومیٹر تک بڑھا کر اسے پرائمری ہیلتھ سینٹرمنگت کے ہسپتال اور راشن سٹور تک پہنچایا جائے۔ انہوں  ممبر اسمبلی بانہال وقار رسول اور ڈپٹی کمشنر رام بن سے اپیل کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سڑک کا مزید آدھا کلومیٹر تعمیر کیا جائے تاکہ 12 ۔ گاوں پر مشتمل منگت کا ہسپتال سڑک رابطے سے جڑ جائے۔ انہوں نے کہا کہ اس سڑک کی تعمیر علاقہ مہو منگت کے ہزاروں لوگوں کے خواب کی وہ تعبیر ہے جو سنہ 1947 عیسوی کے  بعد حقیقتکی شکل میں اب ہمارے سامنے ہے۔  انہوں نے کہا کہ ہپستال اور راشن سٹور تک آدھے کلومیٹر کی  سڑک تعمیرکرنے سے پورے علاقے کو فائدہ ہوگا اور ہسپتال اور فوڈ سٹور بھی سڑک سے جڑجائیں گے۔ انہوں نے کہا اس سڑک کی تعمیر سے منگت کے ہزاروں لوگوں کو ایک پہاڑی کے زریعے گاڑی تک پہنچنے کیلئے  باوا اور مہو تک کے علاقے تک آنے جانے والے دشوار گذار سفر سے نجات ملے گی اور ماضی کی طرح مریضوں کو فوری علاج نہ ملنے کی وجہ سے اپنی جان گنوانا نہیں پڑے گی۔ اس عوامی وفد جس میں علاقہ منگت کے  گْل محمد جان سابقہ سرپنچ ، فاروق احمد شیخ سابقہ پنچ ، نسار احمد کھانڈے ، نظیر احمد بٹ اور فاروق احمد شیخ قابل زکر تھے نے پیر کی دوپہربعد ڈپٹی کمشنر رام بن شوکت ایجاز بٹ سے ملاقات کی اور انہیں اس سلسلہ میں علاقے کے عوام کی طرف سے ایک تحریری درخواستپیش کی، جس میں سڑک کو مزید ادھ کلومیٹر بڑھا کر اسے علاقے کے سب سے  بڑے طبی مرکز اور برفباری کے چار ماہ تک کیلئے راشن ذخیرہ کرنے کیلئے قائم سٹور سے جوڑا جائے تاکہ عوام کو اس سڑک کا اصل فائیدہ پہنچ سکے۔ ڈپٹی کمشنر رام بن نے وفد کو غور سے سننے کے بعد اس معاملے کو ایگزیکٹیو انجینئر پی ایم جی ایس وائی ڈویڑن بانہال کو روانہ کیا اور انہیں ہدایت دی گئی کہ وہ اس معاملے پر مناسب کاروائی کرکے عوامی مسئلے کو حل کرنے کی کوشش کے اقدامات کی رپورٹ انہیں پیش کرنے کی ہدایت دی ہے۔