پہلگام میں اے سی بی کی کارروائی ایگزیکٹیو انجینئر رشوت لیتے ہوئے گرفتار

عارف بلوچ
اننت ناگ//ACB نے پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے ایگزیکٹیو انجینئر فاروق احمد راتھر کو دیہی ترقی ڈیپارٹمنٹ، اچھ بل، اننت ناگ میں بطور اسسٹنٹ ایگزیکیٹو انجینئر کی حیثیت سے زیر التواء فائل پر کارروائی کرنے کے لیے 10,000 روپے کی رشوت طلب کرنے اور قبول کرنے پر گرفتار کیا۔ایک بیان کے مطابق اینٹی کرپشن بیورو کو ایک شکایت موصول ہوئی ،جس میں الزام لگایا گیا کہ فاروق احمد راتھر، ایگزیکٹو انجینئر، پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی 1.49 لاکھ روپے کے منریگا بلوں کے لیے 3فیصد کے حساب سے 10,000 روپے حصہ کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ “فوری شکایت موصول ہونے پر، بدعنوانی کی روک تھام ایکٹ 1988 کے تحت پہلی نظر میں جرم کا پتہ چلا۔ نتیجتاً، کیس ایف آئی آر نمبر 08/2022 پی ایس اے سی بی اننت ناگ میں درج کیا گیا اور تحقیقات شروع کی گئی،‘‘۔”تفتیش کے دوران، ایک ٹریپ ٹیم تشکیل دی گئی تھی۔ ٹیم نے پہلگام ڈیولپمنٹ اتھارٹی کے ایگزیکٹیو انجینئر فاروق احمد راتھر کو شکایت کنندہ سے 10000/- روپے کی رشوت مانگتے اور قبول کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔ اسے اے سی بی کی ٹیم نے موقع پر ہی گرفتار کرلیا۔ رشوت کی رقم بھی آزاد گواہوں کی موجودگی میں اس کے قبضے سے برآمد کی گئی۔