پونچھ کے کھیل کود میدان خستہ حالی کاشکار…کھلاڑیوں کو مشکلات کاسامنا، مرمت کا مطالبہ

پونچھ// پونچھ میں کھیل کود کے میدان حکام کی عدم توجہی کاشکا ربن کر ویران بنتے جارہے ہیں ۔کالج گرائونڈ جو کہ پونچھ کے کھلاڑیوں کے لئے ایک اہم میدان ہے اور جہاں سال بھر ٹورنامنٹ جاری رہتے تھے،میں بھی کھیل کود سرگرمیاں ماند پڑگئی ہیں اور اس جگہ پر تعمیراتی کام چل رہاہے اور لوگ اس کا استعمال اپنی گاڑیوں کیلئے بطورپارکنگ کرتے ہیں۔سپورٹس سٹیڈیم پونچھ کو بھی پونچھ راولاکوٹ بس سروس کا اڈہ بنادیا گیا ہے اور یہ میدان حکام کی عدم توجہی کے باعث کھلاڑیوں کو کھیل سے دور کر کے انہیں منشیات کا عادی بننے کا باعث بن رہاہے ۔پونچھ کے معروف کھلاڑی اور احساس فائونڈیشن کے چیئرمین پرویز احمد آفریدی نے کرتے ہوئے کہا کہ پونچھ کے کھیل کے میدان جو کہ پوری ریاست میں مشہور تھے،کی حالت دن بدن خستہ بنتی جارہی ہے ۔انہوں نے کہا کہ پونچھ کے کھلاڑی جو کہ آئی پی ایل اور رانجی کھیل کھیلنے کی صلاحیت رکھتے ہیں، سہولیات فراہم نہ ہو نے کی وجہ سے وہ آگے نہیں بڑھ پارہے۔انہوں نے کہا کہ کالج گرائونڈ پونچھ گاڑیوں کا سٹینڈ بنا ہوا ہے جہاں جو چاہے اپنی گاڑی کھڑی کر دیتا ہے۔اس کے علاوہ سیاسی اور مذہبی اجلاس بھی یہیں منعقد کئے جاتے ہیں جس کی وجہ سے یہ گرائونڈ برباد ہو رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ سپورٹس سٹیڈیم پونچھ کے لئے بھی کروڑوں روپیہ واگزار کروایا جاتا ہے جو زمینی سطح پر نہیں لگتا اوریہی وجہ ہے کہ وہ گرائونڈ بھی برباد ہو رہا ہے۔کھیل کود میدانوں کی حالت خستہ حالی کا شکار ہونے کی وجہ سے کھلاڑی کھیلنے نہیں آتے۔ انہوں نے کہا کہ میدانوں کو کھیلنے کے لائق نہ بنایا گیا تو نوجوان کھلاڑی بہک کر منشیات کا شکار ہوسکتے ہیںجو بہت بڑی بدقسمتی کی بات ہوگی ۔مقامی کھلاڑیوں نے حکام سے اپیل کی ہے کہ پونچھ کے کھیل کود میدانوں پر توجہ دی جائے اور فوری طور پر مرمت کرکے انہیں کھیل کود سرگرمیوں کے قابل بنایاجائے۔