پونچھ میں سرگرم ریت بجری مافیاکیخلاف احتجاج

پونچھ//پونچھ کے دریائوں ندیوں اور نالوں میں غیر قانونی کان کنی کی کے خلاف پونچھ یوتھ کے بینر تلے پْرامن احتجاج کیا گیا ۔ ضلع ترقیاتی کمشنر کے دفتر کے سامنے کئے گئے احتجاج میں سول سوسائٹی کے ممبران ،وکلا ، بی ڈی سی چیئرپرسنز نے شمولیت کر کے اس سنگین مسئلے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ضلعی انتظامیہ کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ایڈوکیٹ افتخار علی بزمی نے کہا کہ پونچھ کے دریائوں میں جے سی بی لگا کر کان کنی کی جا رہی ہے جس دیکھ کر بھی انتظامیہ ان دیکھی کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ بجری ریت مافیا سرگرم عمل ہے اور دریاوںسے مواد نکالکر وہاں گہری کھائیاں بنا کر چھوڑ دیتے ہیں جس کی وجہ سے پونچھ کے مختلف علاقوں میں درجنوں اموات ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جے سی بی لگانے والے افراد بغیر کسی الاٹمنٹ اور لائسنس کے مواد نکال رہے ہیں اور اس سے سرکاری خزانے کو ایک بہت بڑا نقصان ہو رہا ہے۔ مظاہرین نے انتظامیہ کو 10 دن کا الٹی میٹم دے دیا کہ وہ غیر قانونی کان کنی کی روک تھام کریں بصورت دیگر ضلع بھر میں مختلف مقامات پر مظاہرے کیے جائیں گے۔ احتجاج میں جن دیگر لوگوں نے شرکت کی ان میں ایڈوکیٹ اجیت ورما ، ایڈوکیٹ بھانو پرتاپ ،ایڈوکیٹ آفتاب گنائی، ایڈوکیٹ سلیم شیخ ،ایڈوکیٹ نوجوت شرما،سنجیو شرما صدر ، جمیل کوہلی بی ڈی سی، نصیر گجر بی سی سی گجر، تنویر چوہدری جے کے اے پی، کامران خان جے کے پی ایم ، ایاز مغل ایڈیٹر کانگڑی ڈاٹ کام موجود تھے۔  یہ جاں بھی مزار کافی دیر تک جاری رہا جس کے بعد ایس ایس پی پونچھ ڈاکٹر ونود کمار وہاں پہنچے اور انھوں نے مظاہرین کو یقین دلایا کہ ان کے تمام مطالبات پورے کئے جائیں گے جس کے بعد مظاہرین نے اس شرط پر اپنا احتجاج ملتوی کیا کہ اگر ان کے مطالبات 10 روزکے اندر اندر پورے نہ کیے گئے تو وہ دوبارہ احتجاجی مظاہرے شروع کر دیں گے۔