پونچھ اور شوپیاں کے مشہورسیاحتی مقام پیر کی گلی میں سہولیات کا فقدان زیارت کیلئے آنے والے عقیدت مندوں اور سیاحوں کو دقتوں کا سامنا

حسین محتشم

پونچھ/ /شوپیاں اور پونچھ کے درمیان واقع معروف سیاحتی مقام پیر کی گلی محکمہ سیاحت اور دونوں اضلاع کی انتظامیہ کی عدم توجہی کی وجہ سے بنیادی سہولیات سے محروم ہے ۔سطح سمندر سے تین ہزار چار سو چوراسی میٹر کی بلندی پر واقع ’پیر کی گلی‘ جو سیاحوں کی توجہ کا مرکز ہے۔ اپنی قدرتی خوبصورتی کی وجہ سے مقامی وبیرونی ریاست سیاحوں کی توجہ کے مرکز پر سیاحوں کو بنیادی سہولیات دستیاب نہیں ہیں جس کی وجہ سے ان کو کئی طرح کی دقتوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ پیر کی گلی وادی کشمیر کو صوبہ جموں سے جوڑنے والی تاریخی سڑک مغل روڈ پر واقع ہے۔پیر کی گلی سے گزرنے والے لوگ قدرت کے اس شاہکار کو دیکھ کر دھنگ رہ جاتے ہیں۔یہاں خوبصورت مناظر سیاحوں کا استقبال کرتے ہیں۔ پیر کی گلی جس کی نسبت ایک صوفی بزرگ کے ساتھ منسوب ہے،یہاں زیارت کے لئے آنے والے عقیدت مندوں کو بھی بنیادی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے دقتوں کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔پیر کی گلی کو دیکھنے کے لئے بیرونی ریاست نوئیڈا سے آئے ہوئے سیاحوں کا کہنا تھا کہ پیر کی گلی بہت ہی پرکشش ہے، زیارت کے لنگر میں ستو کے ساتھ نمکین چائے کی چسکیاں لینا ایک الگ ہی تجربہ تھا۔ انہوں نے بتایا یہ جگہ واقعی جنت بے نظیر ہے تاہم یہاں سہولیات کا فقدان ہے۔انہوں کہا حاجت بشری کیلئے بیت الخلاء نہیں ہے اور اگر کبھی موسم اپنے تیور بدل دے تو بارش یا برفباری کی صورت میں لوگوں کو سر چھپانے کے لئے چھت دستیاب نہیں ہے۔ انکا کہنا ہے کہ یہ بنیادی سہولیات اگر دستیاب ہوتی ہیں تو اس سیاحتی مقام پر مزید چار چاند لگ جائیں گے۔لوگوں نے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ مشہور سیاحتی مقام پر بنیادی سہولیات فراہم کی جائیں ۔