پنچایت گھر بنگائی کے جی وی بی کے زیر تصرف

تھنہ منڈی //بلاک تھنہ منڈی کی پنچایت لوہر بنگائی کا پنچایت گھر گزشتہ 11برسوں سے کستوربہ گاندھی بالیکاودھیالیہ (KGBV)اسکیم کے تحت ہوسٹل کے طور پر استعمال کیا جارہاہے جس کی وجہ سے پنچایت اراکین کو اجلاس منعقدکرنے میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے ۔اس ہوسٹل میں غریب کنبوں کے بچوں کو تعلیم فراہم کرنے کیلئے رکھا گیا ہے ۔پنچایت سرپنچ عبدالعزیز نے بتایا کہ 2008میں پنچایت گھر بنگائی پر قبضہ کیاگیا تھا جس کے بعد پنچایت اراکین کے کام کاج میں رکائوٹ آرہی ہے ۔انہوں نے انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ غریب گھروں کی لڑکیوں کو اپنے تعلیم جاری رکھنے کیلئے الگ سے ہوسٹل تعمیر کر کے دیا جائے تاکہ پنچایت کے نظام پر بھی کوئی اثر نہ پڑے ۔انہوں نے کہاکہ ریاستی گورنر نے پنچایتی انتخابات کے دوران وعدہ کیا تھا کہ وہ ریاست میں پنچایت نظام کو مزید مستحکم کرنے کیلئے مزید اقدامات کرینگے لیکن انتخابات ختم ہو نے کے بعد اس طرف کوئی توجہ نہیں دی جارہی ہے جس کی وجہ سے اکثر پنچایتوں میں پنچایت گھر ہی موجود نہیں ہیں اور کچھ پنچایت گھر ناقابل استعمال ہیں ۔بلاک ڈیولپمنٹ آفیسر تھنہ منڈی نے کہاکہ پنچایت گھر سے لڑکیوں کو باہر نکالنا نا مناسب ہو گا جبکہ وہ اس سلسلہ میں ضلع ترقیاتی کمشنر سے بات کرمذکورہ معاملہ کو حل کروانے کی کوشش کر ینگے ۔