پنچایتی اِنتخابات کا پہلا مرحلہ

سرینگر//پنچایتی اِنتخابا ت کے پہلے مرحلے کے لئے بدھ کو نامزدگیاں داخل کرنے کی آخری تاریخ تھی۔اس دوران ریاست بھرمیں547 سرپنچ حلقوں کیلئے 1886 جبکہ 4151پنچ وارڈوں کے لئے 6763 نامزدگیاں داخل کی گئیں۔ اس مرحلے کی ووٹنگ اور ووٹ شماری 17؍ نومبر 2018ء کو ہوگی ۔چیف الیکٹورل آفیسر کے ایک ترجمان کے مطابق صوبہ کشمیر میں 259سرپنچ حلقوں کے لئے 713 اور 2021پنچ وارڈوں کے لئے 2383نامزدگیاں داخل کی گئیں۔اُنہوں نے کہا کہ ضلع بانڈی پورہ کے گریز بلاک میں حالیہ برفباری کے مد نظر نامزگیوں کو داخل کرنے کی آخری تاریخ میں 4دِنوں کی توسیع کی گئی ہے ۔ترجمان نے مزید کہا کہ صوبہ کشمیر میں پہلے مرحلے کے لئے 64سرپنچ حلقوں کیلئے 204نامزدگیاں جبکہ ضلع کپواڑہ کے کیرن ، رامحال ، تارت پورہ ، ٹیٹوال اور ٹنگڈار کے چار بلاکوں میں 498پنچ وارڈوں کے لئے 1051 نامزدگیاں داخل کی گئیں۔اسی طرح ضلع بانڈی پورہ کے گریز ، بگتوراور تلیل کے تین بلاکوں میں 20سرپنچ حلقوں اور 148پنچ وارڈوں کے لئے 88 نامزدگیاں داخل کی گئیں۔ضلع بارہمولہ کے کنزر ، اوڑی ، پرن پیلن ، نورکھن اور رفیع آباد کے کنڈی بیلٹ کے پانچ بلاکوں میں 72سرپنچ حلقوں کے لئے 223اور 584پنچ وارڈوں 767نامزدگیاں داخل کی گئیں۔ضلع گاندربل کے گنڈ بلاک میں 15سرپنچ حلقوں کے لئے15نامزدگیاں جبکہ 105پنچ وارڈوں کے لئے 28نامزدگیاں داخل کی گئیں۔ضلع سری نگر کھنموہ بلا ک میں پانچ سرپنچ حلقو ں کے لئے 8جبکہ 45پنچ وارڈوں کے لئے 10 نامزدگیاں داخل کی گئیں۔ضلع بڈگام کے خانصاحب بلاک میں 26 سرپنچ حلقوں کے لئے 38جبکہ 222 پنچ وارڈوں کے لئے 128 نامزدگیاں داخل کی گئیں۔ضلع کرگل کے 6بلاکوں میں 23پنچ حلقوں کے لئے 133 جبکہ 179پنچ وارڈوں کے لئے 298 نامزدگیاں داخل کی گئیں۔ضلع لیہہ کے 34سرپنچ حلقوں 74 جب کہ 242پنچ وارڈوں کے لئے 217 نامزدگیاں داخل کی گئیں۔