پلوامہ کا سابق زخمی جنگجو | 9 روز بعد دم توڑ بیٹھا

سرینگر//جنوبی ضلع پلوامہ کے کاکہ پورہ قصبہ میں مشتبہ اسلحہ برداروں کی فائرنگ سے زخمی سابق جنگجو9 دن تک موت و حیات کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ میں زندگی کی جنگ ہار گیا ۔15اکتوبر کو پلوامہ کے کا کہ پورہ قصبہ میں دیر شام گئے قریب 8بجے بندوق برداروں نے سابق جنگجو45سالہ تنویر احمد صوفی ولد غلام محمد ساکن صوفی محلہ کاکہ پورہ پر جموں کشمیر بنک کے نزدیک گولیاں چلائیں ،جس کے نتیجے میں وہ شدید طور پر زخمی ہو گیا ۔ وہ آجکل ٹی سٹال چلاتا تھا۔مسلح افراد کی فائرنگ سے زخمی تنویر احمد صوفی کونزدیکی اسپتال علاج و معالجہ کیلئے منتقل کر دیا گیا تھا جہاں ڈاکٹروں نے اس کی حالت نازک دیکھ کو اسکو صورہ منتقل کردیا ۔ صورہ میڈیکل انسٹی چیوٹ  میں قریب نو دن ونوں تک زیر علاج رہنے کے بعد تنویر احمد صوفی اتوار کی صبح زندگی کی جنگ ہار گیا ۔ اسپتال میں تعینات ایک ڈاکٹر نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ تنویر صوفی اتوار کی صبح زخموں کی تاب نہ لاکر دم توڑ بیٹھا ۔قصبہ میں تنویر احمد صوفی کے انتقال کی خبر علاقے میںپھیل گئی تو وہاں صف ماتم بچھ گئی ۔