پلوامہ میں زوردار آندھی ،طوفانی بارشیں اور شدیدژالہ باری

پلوامہ+شوپیان// بڈگام ، پلوامہ اور شوپیان میں قہر انگیز ژالہ باری، شدید آندھی اور بارشوں نے بڑے پیمانے پر تباہی مچادی۔ہزاروں کنال اراضی پر پھیلے میوہ باغات تباہ ہوگئے، سینکڑوں درخت اکھڑ گئے اور درجنوں گاڑیوں اور مکانوں کو شدید نقصان ہوا۔سہ پہر قریب 5بجے شدید بارشیں شروع ہوئیں، جس کے ساتھ ہی زوردار آندھی آگئی اور ژالہ باری کا آغاز ہوا۔ پلوامہ قصبے میں زوردار آندھی ، ژالہ باری  اور بارشوں کا ایک ساتھ قہر بپا ہوا جس نے پورے قصبے کو اپنی لپیٹ میں لیا اور 15منٹ تک قیامت صغریٰ بپا ہوئی۔صورتحال کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ قصبے میںملک پورہ اور سر کیولر روڑ سمیت تین مقامات پر زیر تعمیر 3شاپنگ کمپلیکسوں  کو شدید تقصان پہنچا ، علاوہ ازیں ایک ٹاٹا موبائل گاڑیوں اور 3چھوٹی گاڑیوں پر درخت گر گئے اور وہ تباہ ہوئیں۔ درسو پلوامہ میں 4مکانوں، کالج روڑ نیو کالونی میں ایک اور پرچھو میں ایک رہائشی مکان کو بھی شدید نقصان پہنچا۔بارشیں اور ژالہ باری کا سلسلہ پکھر پورہ بڈگام،پلوامہ کے علاوہ راجپورہ،دربہ گام، کیلر، مورن، متریگام،اونتی پورہ، ترچھل،ٹہاب،ببہ گام ،مژھ پونہ،ٹینگ ہاڑ ،ہال،گابر پورہ ،آری ہل ،زاسو، تملہ ہال،وہاب صاحب لدھو،کے ساتھ ساتھ ترال کے کئی علاقوں میںجاری رہا۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ شام پانچ بجے کے قریب ژالہ باری نے 
قہر انگیزی اختیار کی اور اسکے بعد زوردار آندھی نے قہر بپا کیا۔مورن اور دیگر دیہات میں درجنوں تعمیراتی ڈھانچوں کو نقصان پہنچا جبکہ میوہ باغات اورسبزیاں تباہ ہوگئیں۔تقریباً25منٹ تک  یہی صورتحال جاری رہی جو اس قدر شدید تھی کہ درختوں کے پتے اور شاخیں زمین پر گر آئیں جبکہ تیز ہوائوں کے نتیجے میں بجلی کے کھمبے اور درخت اکھڑ گئے، جس کی وجہ سے کافی نقصان ہوا جبکہ چند ایک مقامات پر درخت گرنے کی وجہ سے سڑکیں ناقابل آمدرفت بن گئیں۔