پریم نگر شبنوتھ کے مقام پر تیسرے روز بھی تلاشی کاروائی جاری

اشتیاق ملک

ڈوڈہ //ڈوڈہ کشتواڑ قومی شاہراہ پر منگل کی شام شبنوتھ پریم نگر کے نزدیک ایک نجی گاڑی حادثہ میں غرقاب ہوئے 3 نوجوانوں کی تلاش کا سلسلہ تیسرے روز بھی جاری رہی جس دوران ضلع و سب ڈویژنل انتظامیہ نے 9 راشٹریہ رائفلز کے خصوصی کمانڈوز و غوطہ خوروں کی خدمات حاصل کی گئیں تاہم آخری اطلاع ملنے تینوں نوجوانوں کی لاشیں بازیاب نہیں ہو سکیں۔ ایس ڈی ایم ٹھاٹھری اطہر امین زرگر نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ڈپٹی کمشنر ڈوڈہ وشیش پال مہاجن و ایس ایس پی ڈوڈہ عبد القیوم کی زیر نگرانی جمعہ کے روز بھی امدادی کاروائی جاری رکھی جس میں فوج کے پیرا کمانڈوز کی خدمات حاصل کیں گئیں اور سرد موسم کے باوجود دن بھر انہوں نے اپنی تلاش جاری رکھی لیکن کچھ حاصل نہیں ہوا۔یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ منگل کی شام ساڑھے سات بجے کے قریب ڈوڈہ سے ٹھاٹھری آرہی ایک سویفٹ گاڑی پریم ن شبنوتھ کے مقام پر شاہراہ سے نیچے لڑھک کر چناب میں جا گری جس میں سوار 4 مقامی نوجوان بھی غرقاب ہوئے۔اس دوران امدادی کاروائی کے دوران بدھ کو گاڑی چناب سے باہر نکالی گئی جس میں ایک نوجوان کی لاش بھی پائی گئی تاہم تین دیگر نوجوانوں کی لاشیں آج بھی بازیاب نہیں ہوئیں۔