پردھان منتری روزگار پروہتساہن یوجنا

نئی دہلی// سماجی تحفظ میں اضافہ کے لئے بہت دھوم دھام کے ساتھ شروع کی گئی ' پردھان منتری روز گار پروتساہن یوجنا ' میں گزشتہ مالی سال کے دوران مختص رقم میں 20 فیصد سے بھی کم رقم خرچ کی جا سکی ہے ۔محنت اور روزگار کی وزارت سے وابستہ ایک پارلیمانی کمیٹی کی ایک رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ مالی سال 17۔2016 کیلئے ' پردھان منتری روز گار پروتساہن یوجنا ' کے لئے 1000 کروڑ روپے کا انتظام کیا تھا جسے ترمیمی تخمینہ میں کم کرکے 200 کروڑ روپے کر دیا گیا۔ تاہم 31 دسمبر 2016 تک اس رقم میں سے صرف 154.98 کروڑ روپے ہی خرچ کئے جا سکے ۔ حالانکہ موجودہ مالی سال 18۔2017 میں ' پردھان منتری روز گار پروتساہن یوجنا ' کے لئے ایک بار پھر 1000 کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں۔ الاٹمنٹ کی رقم خرچ نہ ہونے کی پارلیمانی کمیٹی کے خدشات کا جواب دیتے ہوئے وزارت نے کہا ہے کہ تکنیکی اور دیگر وجوہ سے یہ رقم خرچ نہیں کی جا سکی۔ مالی سال 18۔2017 میں مختص کی گئی 1000 کروڑ روپے کے پورے استعمال کی تیاریاں کر لی گئی ہیں۔ اس اسکیم کے لئے پروموشنل مہم چلائی جائے گی اور آجروں اور ملازمین کو اس کے تئیں بیدار کیا جائے گا۔ اس کے لئے صنعتی تنظیموں کی مدد بھی لی جائے گی۔واضح رہے کہ ' پردھان منتری روز گار پروتساہن یوجنا ' نام سے قائم کی گئی اس نئی اسکیم کا مقصد روز گار کے مواقع پیدا کرنا ہے ، جس کے لئے رواں مالی سال میں بھی 1000 کروڑ روپئے کی رقم مختص کی گئی ہے ۔یو این آئی