پرائمری ہیلتھ سنٹر لاح میں احتجاج کا معاملہ

تھنہ منڈی//دوروز قبل تھنہ منڈی کے پرائمری ہیلتھ سنٹر لاح میں عوام کے احتجاج پر محکمہ کی طرف سے تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی گئی جس نے اگرچہ رپورٹ تیار کرلی ہے تاہم چیف میڈیکل افسر راجوری کاکہناہے کہ انہیں کوئی رپورٹ نہیں ملی اور قصورواروں کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ واضح رہے کہ تھنہ منڈی لاح علاقے میں تین زخمیوں کو مقامی پرائمری ہیلتھ سنٹر لیجایاگیاجہاں لوگوںنے یہ الزام عائد کرتے ہوئے محکمہ صحت کے خلاف احتجاج کیاکہ تب طبی مرکز مقفل تھا ۔اس دوران مقامی لوگوںنے محکمہ صحت کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے ملازمین اور حکام پر لاپرواہی برتنے کا الزام عائد کیا ۔ مقامی لوگوںنے بتایاکہ بدھ کے روز لاح سڑک پر ایک حادثہ ہوا جس میں دو مستورات ہمشیرہ بیگم زوجہ عبدالعزیز اور راحیلہ کوثر دختر عبدالعزیز زخمی ہوئیں۔ اسی دورا ن ایک راہگیر بھی شدید زخمی ہوا۔ جب ان زخمیوں کو مرہم پٹی کے لئے نزدیکی ہسپتال پہنچایا گیا تویہ طبی مرکز ہی بند تھا۔ اس پر مقامی لوگوں نے محکمہ کے خلاف جم کر نعرہ بازی کی اور الزام عائد کیا کہ محکمہ کا نظام درہم برہم ہوکر رہ گیاہے ۔مقامی لوگوں کے احتجاج کو دیکھتے ہوئے بلاک میڈیکل آفیسر درہال ڈاکٹر محمد ا شرف کوہلی نے موقعہ کا جائزہ لیکر اس کی تحقیقات کیلئے تین رکنی کمیٹی تشکیل دی جس میں زونل میڈیکل آفیسر تھنہ منڈی ڈاکٹر غلام احمد، سی ایچ او تنویر خان اور کلرک بابر خان شامل ہیں۔ ذرائع کاکہناہے کہ کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق اس بات کا ا نکشاف ہواہے کہ محکمہ صحت کے ایک ملازم کے اکسانے پر لاح میں چند مقامی لوگوں نے احتجاج کیا۔ رابطہ کرنے پر زونل میڈیکل آفیسر تھنہ منڈی ڈاکٹر غلام احمد چوہدری نے کہاکہ وہ اس کمیٹی کے ممبر نہیں تھے ۔ انہوں نے کہا کہ انہیں چیف میڈیکل آفیسر راجوری اور بلاک میڈیکل آفیسر درہال کی طرف سے حکم ملا تھا کہ لاح سڑک پر حادثہ ہوہے جس پر انہوںنے فوری کارروائی کرتے ہوئے ٹیم کے ساتھ پرائمری ہیلتھ سنٹر لاح کادورہ کیا۔بلاک میڈیکل آفیسر درہال ڈاکٹر محمد اشرف کوہلی نے بتا یا کہ بلاک درہال میں ٹیکنیکل سٹاف کی کافی قلت ہے جس کی وجہ سے محکمہ کاکام متاثر ہوتاہے ۔تاہم انہوں نے کہا کہ پرائمری ہیلتھ سنٹر لاح کے معاملے کی تحقیقاتی رپورٹ موصول ہوئی ہے اورسڑک حادثے میں مضروب عورتوں کی مرہم پٹی محکمہ کے ایک ملازم نے کی تھی جوہسپتال میں موجود تھا۔ انہوں نے کہا کہ زونل میڈیکل آفیسر لاح کو ہدایت جاری کی گئی ہے کہ آئندہ ڈیوٹی کے دوران کوتاہی برتنے والے ملازمین کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ آئندہ روسٹر کے مطابق ملازمین کو ڈیوٹی پر حاضر رہنا ہوگا۔وہیںچیف میڈیکل افسرراجوری ڈاکٹر سریش گپتا نے بتایاکہ اظہار وجوہ کا نوٹس جاری کیاگیاتھاتاہم ابھی تک ان کے پاس کوئی رپورٹ نہیں پہنچی ۔ انہوںنے کہاکہ رپورٹ ملنے پر اگر کوئی قصوروار پایاگیاتواس کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔