پرائمری اسکول نکہ مغلاں گوہلد کی اراضی پر ناجائز قبضہ کا الزام

مینڈھر//گورنمنٹ پرائمری اسکول نکہ مغلاں گوہلد کے گردو نواح کے لوگو ں نے محکمہ تعلیم کے اعلی آفیسران کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ سکول کی جائیداد پر لوگوں نے قبضہ کرلیا ہے اور متعلقہ محکمہ کے آفیسران ٹس سے مس نہیں ہورہے ہیں۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ سکول کے کھاتہ میں چار کنال سے زائد زمین ہے جبکہ اس وقت بڑی مشکل سے ایک کنال زمین بھی سکول کے کھاتہ میں نہیں ہے ۔لوگوں نے کہا کہ سکول کی جائیداد کو لیکر ہم نے کئی بار متعلقہ آفیسران سے شکایت بھی کی کہ سکول کی جگہ پر لوگ قبضہ کررہے ہیں لہٰذا سکول کے ارد گرد دیواری بندی کی جائے لیکن متعلقہ محکمہ نے ایسا نہیں کیا اور اب دن بدن سکول کی اراضی سکڑتی جارہی ہے اور لوگوں نے اپنا قبضہ سکول کی دیوار تک پہنچادیا ہے۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ سکول میں چھوٹے چھوٹے بچے زیر تعلیم ہیں جنہیں کھیلنے کیلئے بھی کوئی جگہ نہیں ہے لہٰذا سکول کی جگہ کی نشاندہی کرواکر چاردیواری کروائی جائے تاکہ سکول محفوظ رہ سکے ا۔ اس سلسلہ میں جب ڈپٹی سی او مینڈھر سے بات ہوئی تو انکا کہنا تھا کہ سکول کی جگہ پر ناجائز قبضہ نہیں ہونے دیں گے اوربہت جلد نشاندہی کرواکر جن لوگوں نے ناجائز قبضہ کیا ہے، انکے خلاف کاروئی عمل میں لائی جائے گی ۔