پرائمری اسکول رٹانہ سزار کی عمارت محض 18 سال میں خستہ

کشتواڑ// ضلع کشتواڑ کی سب ڈویڑن پاڈر کے علاقہ سزار میں قایم گورنمنٹ پرائمری سکول رٹانہ کی عمارت چند سال میںہی خستہ ہوچکی ہے جس سے اس سکول میں زیرتعلیم بچے مجبور ہوکر نجی عمارت کے ایک کمرے میں تعلیم حاصل کررہے ہیں۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ 2004میں قائم کئے گئے اس سکول میں25 کے قریب بچے تعلیم حاصل کررہے ہیں۔ 8 سال قبل زمین کھسکنے کے سبب سکولی عمارت کو نقصان پہنچاتھا جسکے سبب سکولی عمارت ناقابل استعمال ہوئی او ربعدمیں بچوں کو نجی عمارت کے ایک کمرے میں پڑھایاجارہا ہے۔اگرچہ انھوں نے معاملے کو لیکر اعلیٰ حکام کو آگاہ بھی کیا لیکن آج تک اس عمارت کی مرمت نہ ہوسکی۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ علاقہ کی عوام کافی غریب ہے اور وہ اپنے بچوں کو پرائیوٹ سکولوں میں تعلیم فراہم نہیں کرسکتے ہیں۔ انھوںنے ضلع انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ سکول کی عمار ت کو جلد از جلد ٹھیک کیا جائے تاکہ بچے تعلیم حاصل کرسکیں۔انچارج زیڈ ای او پاڈر منگل سنگھ نے بتایا کہ انھیں چند روز قبل ہی چارج دیا گیا ہے اور وہ ازخود سکول کا دورہ کرکے جایزہ لینگے تاکہ بچوں کی تعلیم متاثر نہ ہو۔