پختہ پل عارضی ڈ ھانچے کے سہارے ،سدہ خواص کی عوام پریشان | لوگ لکڑیاں لگا کر پل تک پہنچنے پر پریشان ،رواں برس کام مکمل ہو گا :محکمہ

راجوری//جموں وکشمیر میں تعمیر و ترقی کی مثال قائم کر تے ہوئے محکمہ دیہی ترقی کی جانب راجوری کے خواص علاقہ میں ایک فٹ برج تعمیر کیاجبکہ لوگوں کو اس پختہ پل تک پہنچنے کیلئے بھی لکڑی کے چھوٹے عارضی پلوں کا استعمال کرنا پڑتا ہے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ دیہی ترقی کے کام پر تنقید کرتے ہوئے الزام عائد کیا کہ محکمہ دیہات میں ’’جگاڑ‘‘چلا کر لوگوں کو سہولیات فراہم کرنے کی کوششیں کررہا ہے ۔مکینوں نے بتایا کہ اپنے آپ میں ایک منفرد پل برسوں پہلے محکمہ دیہی ترقی نے تعمیر کیا تھا لیکن ایگزیکٹو ایجنسی کی جانب سے اپروج لیس پل کی تعمیر عمل میں لائی گئی ہے جس کی وجہ سے دیہاتیوں نے اسے قابل رسائی پْل بنانے کیلئے لکڑیاں لگا کر راستہ کو ہموار کرنے کی کوششیں کی ہیں ۔علاقہ کے معززین نے بتایا کہ لوگوں کی جانب سے کیا گیا عارضی بندوبست لوگوں کیلئے انتہائی خطرے ناک ثابت ہو سکتا ہے ۔ مقامی لوگوں کا کہنا تھا کہ ان کے پاس پل پر اس عارضی انتظام کے علاوہ کوئی چارہ نہیں بچا کیونکہ محکمہ دیہی ترقی کے افسران نے اس پل کی اپروچ کی تعمیر کیلئے ان کی درخواست پر کوئی دھیان دینے کی زحمت ہی نہیں کی ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ روزانہ کی بنیاد پر علاقے کے سینکڑوں افراد اس پل پر سے اپنی جانیں بچا کر گزرتے ہیں لیکن محکمہ اس حالت زار پر توجہ نہیں دے رہا۔ضلع انفارمیشن آفیسر راجوری کے دفتر کے ذریعہ جاری کردہ ایک سرکاری بیان میں محکمہ دیہی ترقی محکمہ نے کہا کہ اس پل کا کام مالی سال 2019-2020 کے دوران انجام دیا گیا تھا لیکن فنڈز کی کمی کی وجہ سے یہ کام پوری طرح سے مکمل نہیں ہوسکا تھا۔محکمہ نے بتایا کہ پل کی سائیڈوں کا کام ابھی التوا میں ہے ۔اس میں مزید کہا گیا ہے کہ اب اس پل کے اپروچ کا کام ٹھیکیدار کو الاٹ کر دیا گیا ہے اور اسے رواں مالی سال میں مکمل کر لیا جائے گا۔