پتھربازوں پردرج معاملات واپس لینے کیخلاف مظاہرہ

جموں//ڈوگرہ فرنٹ اورشیوسینا کے کارکنان نے وادی کشمیرکے 9730 پتھربازوں کورہاکرنے کے خلاف جموں شہرمیں احتجاجی مظاہرہ کیا۔اس دوران ڈوگرہ فرنٹ اورشیوسیناکے سدراشوک گپتانے وادی میں 9730پتھربازوں کورہاکرنے کیلئے حکومت کوتنقیدکانشانہ بنایا۔انہوں نے کہاکہ حکومت نے سیکورٹی اہلکاروں کیخلاف درج ایک بھی معاملے کوکیوں واپس نہیں لیا جبکہ ملک دشمن عناصرکیخلا ف درج معاملات کوبغیرکسی شرط کے واپس لے لیا۔انہوں نے 9730 پتھربازوں میں 56سرکاری ملازمین ہیں اورحریت کے ساتھ وابستہ ہیں۔ انہوں نے کہاکہ حریت کارکنان کیلئے پتھربازی ایک انڈسٹری بن گئی ہے ۔انہوں نے کہاکہ پتھربازوں کے خلاف درج معاملات واپس لیناباعث افسوس بات ہے۔انہوں نے کہاکہ اس سے پہلے حکومت نے برہان وانی کے بھائی کے لواحقین کے حق میں پانچ لاکھ روپے ایکس گریشیاریلیف دینے کااعلان کیاتھا ۔انہوںنے کہاکہ حکومت فوج کیخلاف ایف آئی آردرج کرتی ہے اور ملک دشمنوں کومعاوضے اورنوکریاں فراہم کرتی ہے ۔ا س دوران مظاہرین میں سریش ،لبھا، دویندر ، پون، نانکی، سشما،ساچی،راج کمار، ست پال ودیگران شامل تھے۔