پاکستان کیساتھ اچھے تعلقات کے خواہشمند

دہرادون//وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ نے جمعرات کو کہا کہ پاکستان کو جموں و کشمیر میں اپنی "شرارتی سرگرمیوں" سے باز آنا ہوگا۔ سنگھ نے کہا کہ ہندوستان تمام ممالک کے ساتھ خاص طور پر اپنے پڑوسیوں کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتا ہے کیونکہ دوست بدلے جا سکتے ہیں پڑوسی نہیں، سنگھ نے کہا "لیکن پاکستان یہ نہیں سمجھتا اور جموں و کشمیر میں اپنے منصوبے کو جاری رکھے ہوئے ہے‘‘۔سنگھ نے اترکاشی میں پارٹی کی ایک ریلی میں کہا، "اٹل جی پاکستان اس لیے گئے تھے کیونکہ وہ اس کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتے تھے، لیکن عجیب بات ہے کہ ہمارا پڑوسی جموں و کشمیر میں اپنی شرارتی سرگرمیوں سے باز نہیں آتا، تاہم، میں آپ کو یقین دلاتا ہوں کہ اسے کرنا پڑے گا‘‘۔سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپائی کے دورہ کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ جموں و کشمیر کے سوال کو زندہ رکھنا چاہتا ہے۔سنگھ نے کہا کہ سرجیکل اور فضائی حملوں کے ذریعے پاکستان کی سرزمین پر دہشت گردی کے کیمپوں کو مسمار کر کے ہندوستانی فوجیوں نے پوری دنیا کو یہ پیغام دیا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں یہ ایک مضبوط ہندوستان ہے جو اپنی سرزمین پر بھی پاکستان کو منہ توڑ جواب دینے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ مرکزی وزیر نے کہا کہ شیاما پرساد مکھرجی کی قیادت میں جن سنگھ نے 1951 میں آرٹیکل 370 کو ختم کرنے کا وعدہ کیا تھا۔"ہم اقتدار میں آئے اور ہم نے یہ کر دکھایا۔ جب ہم نے ایودھیا میں رام مندر بنانے کا وعدہ کیا تھا تو کانگریس نے اس پر یقین نہیں کیا تھا۔ کیا آج ایودھیا میں عظیم الشان رام مندر نہیں بن رہا ہے؟"۔