پاکستان کرکٹ میچ کی جیت کا مبینہ جشن

آگرہ// گذشتہ سال ٹی۔20 کرکٹ عالمی کپ میں ہندوستان کے خلاف پاکستان ٹیم کی جیت کا مبینہ جشن منانے کے الزام میں قید تین کشمیری طلبہ کے خلاف اترپردیش کے آگرہ کی ایک مقامی عدالت میں پولیس نے چارج شیٹ فائل کردی ہے ۔ ملزمین گذشتہ 28اکتوبر سے جیل میں قید ہیں۔گذشتہ سال دبئی میں ٹی۔20ورلڈکپ کے دوران 24اکتوبر کو ہندوستان ۔ پاکستان  کے درمیان میچ ہوا تھا۔ اس میچ میں ہندوستان کو پاکستان سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔الزام ہے کہ پاکستان کی جیت پر یہاں واقع آر بی ایس انجینئرنگ کالج کے بچ پوری کیمپس میں پڑھنے والے تین کشمیری طلبہ ارشد یوسف، عنایت الطاف اور شوکت احمد غنی کے درمیان وہاٹس ایپ چیٹ سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی تھی۔جس کے پاداش میں کالج انتظامیہ نے انہیں معطل کردیا تھا۔معاملہ ہندووادی تنظیموں کے علم میں آنے پر انہوں نے کیمپس پہنچ کر ہنگامہ کھڑا کردیا تھا۔بھارتیہ جنتا یوا مورچہ کے عہدیدار گورو راجاوت کی تحریر پر جگدیش پورا تھانے میں تینوں کشمیری طلبہ کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ پولیس نے 27اکتوبر کو تینوں کو گرفتا ر کر کے جیل بھیج دیا تھا۔ان کی گرفتاری کے بعد ریاست کے وزیر اعلی یوگی آدتیہ ناتھ نے خود ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا تھا‘پاکستان کی جیت کا جشن منانے والوں کے خلاف بغاوت کا مقدمہ چلایا جائے گا’۔تینوں کشمیر ی طلبہ کے خلاف آئی پی سی کی دفعہ 153اے ،505 اے بی اور آئی ٹی ایکٹ 2008 کی دفعہ 66ایف کے تحت مقدمہ درج کیا گیا تھا۔ایف آئی آر میں الزام لگایا گیا تھا کہ تینوں طلبہ نے ملک مخالف نعرے بازی کی اور انتشاری پھیلانے کی کوشش کی ہے جس کی وجہ سے ماحول خراب ہوسکتا تھا’۔