پاکستان نے دہشت گردوں کو بھیجنا بند نہیں کیا تو پانی روک دیں گے :گڈکری

امرتسر//مرکزی وزیر سڑک ونقل وحمل نتن گڈکری نے بدھ کو کہا ہے کہ اگر پاکستان نے دہشت گردوں کو نہیں روکا تو ہندوستان پاکستان کی طرف جارہی ندیوں کے پانی کو روک سکتا ہے ۔مسٹر گڈکری نے بدھ کو یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ 1960 میں ہوئے آبی معاہدے کے مطابق ہندوستان کی چھ میں سے تین ندیوں کا پانی پاکستان کو دیا گیاتھا۔ انہوں نے کہا کہ معاہدے میں لکھا گیا ہے کہ آپسی محبت اور بھائی چارے کے وجہ سے ندیوں کا پانی پاکستان کو دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ اگر پاکستان ہندوستان کے خلاف دہشت گردی کو نہیں روکتا ہے کہ تو پاکستان کی طرف جارہی ندیوں کے پانی کو ہندوستان روک سکتا ہے ۔ مسٹر گڈکری نے کہا کہ مرکزی حکومت ملک کے سبھی دریاؤں کو ایک دوسرے کے ساتھ جوڑنے کا منصوبہ بنارہی ہے جس سے ملک کے سبھی ریاستوں کے پانی کا مسئلہ حل ہوجائے گا۔ انہوں نے کہا کہ چھ ریاستوں میں بند تعمیر کئے جارہے ہیں جن میں سے شاہ پور کانڈی کا بند تیار ہوچکا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ 26 ہزار ایکڑ میں بنے شاہ پور کانڈی بند کا پانی پنجاب اور ہریانہ کو دیا جائے گا۔ یہاں 206 میگاواٹ بجلی کی بھی پیداوار کی جائے گی۔ پنجاب میں پٹیالہ فیڈر سے جالندھر، کپورتھلہ اور ہوشیار پور کے کسانوں کو فائدہ ہوگا۔ وزیراعظم نریندر مودی کے پانچ برسوں کے میعاد کار کے دوران کئے گئے ترقیاتی کاموں کا ذکر کرتے ہوئے مسٹر گڈکری نے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) ترقیاتی کاموں کے نام پر انتخابات لڑرہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت نے ملک میں چار اور چھ لائنوں کی سڑکوں کی شاندار تعمیر کروا کر ملک میں انقلاب لادیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ دہلی سے کٹرا تک ایکسپریس وے کی تعمیر کئے جارہے ہیں جس کے مکمل ہونے پر دہلی سے کٹرا کی دوری 572 کلومیٹر ہوجائے گی۔ اسی طرح دہلی سے امرتسر کی دوری صرف چار گھنٹے میں طے کی جاسکے گی۔ انہوں نے کہا کہ گڑگاؤں سے ممبئی تک بنائے جارہے ہائی وے سے دہلی میں ممبئی کا سفر 12 گھنٹے میں طے کیا جاسکے گا۔ اس طرح امرتسر سے ممبئی 17 گھنٹوں میں ہوسکے گا۔ پاکستان میں واقع گردوارہ کرتار پور صاحب کے لئے بنائے رہے گلیاروں سے متعلق انہوں نے کہا کہ گلیارے تین سے چار ماہ میں مکمل بن کر تیار ہوجائے گا۔