پاکستانی زیر انتظام کشمیر میں عام انتخابات25جولائی کو

سرینگر//پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے الیکشن کمیشن نے 25جولائی کو قانون ساز اسمبلی کے عام انتخابات کرانے کا اعلان کیا ہے۔ الیکشن کمیشن نے کورونا وائرس کے معاملات میں اضافہ ہونے پر چنائو کو 2ماہ کیلئے ملتوی کرنے کی اپیلوں کوخارج کردیا ہے۔ گزشتہ برس پاکستان نے گلگت بلتستان میں قانون ساز اسمبلی میں چنائو منعقد کرائے تھے۔ جس پر بھارت نے پاکستان کے فیصلے کی شدید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ فوج کے زیر قبضہ علاقہ میں کوئی بھی تبدیلی کرنے کی قانونی جوازیت نہیں ہے۔ بھارت نے پاکستان کو واضح طور پر کہا کہ جموں وکشمیر یونین ٹیریٹری، لداخ اور گلگت بلتستان بھارت کا ناقابل تنسیخ حصہ ہیں۔ چیف الیکشن کمشنر جسٹس (ر) عبدالرشید سلہریا نے مظفر آباد میں پریس کانفرنس کے دوران چنائو کرانے کے شیڈول کا اعلان کرتے ہوئے کہاکہ ’پاکستانی زیر انتظام آزادی کشمیر کے لوگ 25جولائی کو بہتر انتظامیہ کیلئے ووٹ استعمال کرسکتے ہیں‘۔ انہوںنے کہاکہ امیدوار اپنے نامزدگی کاغذات 21جون تک داخل کرسکتے ہیں اور حتمی فہرست 3جولائی کو شائع کی جائیگی۔ قانون ساز اسمبلی میں45نمائندوں ، جن میںپاکستانی زیر انتظام آزادکشمیر میں33اور کشمیری مہاجروں کیلئے 12شامل ہیں،منتخب کرنے کیلئے چنائو ہوگا۔ انہوںنے کہاکہ اس دفعہ کے انتخابات میں4چناوی حلقوں کا اضافہ کیاگیاہے۔ چنائو میں 28لاکھ اہل ووٹر اپنے رائے حق دہی کا استعمال کررہے ہیں جس کیلئے نیم فوجی دستوں رینجرس اور پولیس کو سول انتظامیہ کے ہمراہ تعینات کیا جائیگا ۔اس سے قبل نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر(NCOC)نے کورونا وائرس میں اضافہ کے خطرے کو دیکھتے ہوئے 2ماہ کیلئے چنائو ملتوی کرنے پر زور دیا لیکن تمام حزب مخالف جماعتوں نے اسے مسترد کردیا۔