پاورڈیولپمنٹ کارپوریشن میں17اعلیٰ افسران کے تبادلے

بلال فرقانی

سرینگر// پائور ڈیولپمنٹ کارپوریشن میں انچارج چیف انجینئر اور انچارج سنیئر جنرل منیجر سمیت 17سپر انٹنڈنگ اور ایگزیکٹو انجینئروں کے تبادلے اور تقرریاں عمل میں لائیں گئی۔ ایک حکم کے مطابق انتظامیہ کے مفاد میں انچارج چیف انجینئر(الیکٹرک) راحیلہ وانی جو کارپوریشن کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر کے امور کو بھی دیکھ رہی تھیں، تا حکم ثانی چیف انجینئر جنریشن ونگ کا چارج بھی سنبھالیں گی اور انچارج چیف انجینئر سنیل کمار کو اضافی چارج سے فارغ کریں گی۔ انچارج سینئر جنرل منیجر کارپوریٹ آفس محمد یوسف بابا اپنی ذمہ داریوں کے علاوہ مزید احکامات تک انچار جسپرانٹنڈنگ انجینئر جنریشن سرکل دوئم کا چارج بھی سنبھالیں گے۔ حکم کے مطابق انچارج سپر انٹنڈنگ انجینئر جنریشن سرکل دوئم سرینگر فضل الرحمان شاہداد کو تبدیل کرکے انچارج سپر انٹنڈنگ انجینئر جنریشن سرکل اول،پی ڈی سی بارہمولہ تعینات کیا گیا جبکہ انچارج سپر انٹنڈنٹ جنریشن سرکل سوم ٹھاکر داس کو تبدیل کرکے انچارج سپر انٹنڈنٹ’پی ایچ ای پی‘ تعینات کرکے محمد یوسف بابا کو اضافی چارج سے فارغ کیا گیا۔ مذکورہ افسر تا حکم ثانی اپنی ذمہ داریوں کے علاوہ انچارج سپر انٹنڈنٹ انجینئر سرکل سوم جموں کی ذمہ داریاں بھی سنبھالے گے۔

 

آرڈر کے مطابق فیاض احمد میر کو انچارج سپر انٹنڈنٹ انجینئر (سیول) ’این جی ایچ ای پی‘‘ تعینات کیا گیا جبکہ انچارج ایگزیکٹو جنریشن ڈویژن فسٹ’بی ایچ ای پی‘ ادھمپور انجینئر سنجے کمار بھگت کو تبدیل کرکے چیف انجینئر جنریشن جموں کے ٹیکنکل افسر تعینات کیا گیا۔مذکورہ افسر،اپنی ذمہ داریوں کے علاوہ تا حکم ثانی’ای پی ڈی‘ جموں کا اضافی چارج بھی سنھالیں گے اور عبدالحمید راتھر کو اضافی چارج سے فارغ کریں گے۔ حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ انچارج ایگزیکٹو انجینئر ماریر حسین،جو کہ فی الوقت چیف انجینئر(الیکٹرک) بی ایچ پی کے ٹیکنکل افسر تھے کو تبدیل کرکے انچارج ایگزیکٹو انجینئر جنریشن ڈویژن،یو ایس ایچ پی دوئم کنگن تعینات کرکے اپنی ذمہ اریوں کے علاوہ مزید احکامات تک ایگزیکٹو انجینئر جنریشن ڈویژن گاندربل کا اضافی چارج بھی سونپا گیا۔انچارج ایگزیکٹو انجینئر،جی ڈی اپر سندھ ہائیڈرل پروجیکت سکینڈ کنگن یش پال کو تبدیل کرکے جنریشن ڈویژن فسٹ،بی ایچ ای پی میں سنجے بھگت کی جگہ تعینات کیا گیا جبکہ انچارج ایگزیکٹو انجینئر سی ایم ڈی،اپر سندھ ہائیڈرل پروجیکت سکینڈ کنگن انیل کمار جن کے پاس این جی ایچ ای پی اور ایس وی پی کنگن کا اضافی چارج بھی تھا کو تبدیل کرکے انچارج ایگزیکٹو انجینئر،سی سی ڈی،سیوا تعینات کرکے سرجیت سنگھ کو اضافی چارج سے فارغ کیا گیا۔ منیجنگ ڈائریکٹر کی جانب سے جاری آرڈر میں کہا گیا کہ انچارج ایگزیکٹو انجینئر جنک شرما کو جنرل منیجر(سیول) کارپوریٹ آفس جموں تعینات کیا گیا جبکہ انہیں ایگزیکٹو انجینئر لاور کلنائی،سی سی ڈی یکم و دوم اور کرتھائی،سی سی ڈی یکم کا اضافی چارج بھی دیا گیا۔انچارج ایگزیکٹو انجینئر سمیع اللہ بیگ کو سی آئی ای ڈی سوپور میں تعینات کیا گہا جبکہ انہیں اپنی ذمہ داریوں کے علاوہ تا حکم ثانی ایگزیکٹو انجینئر سی ایم ڈی، لور جہلم ہائیڈرل پروجیکٹ بارہمولہ کا اضافی چارج دیکر معصود احمد وانی کو اضافی چارج سے فارغ کیا گیا۔ آرڈر کے مطابق انچارج ایگزیکٹو انجینئر زاہد حسین کو چیف پروجیکٹ انجینئر پارانی کا تیکنکل افسر تعینات کیا گیا جبکہ انہیں اپنی ذمہ داریوں کے علاوہ تاحکم ثانی ایگزیکٹو انجینئر میکنیکل ڈویژن پارانی کا چارج بھی دیا گیا اور راجیو کمار پوندو کو اضافی چارج سے فارغ کیا گیا۔

 

انچارج ایگزیکٹو انجینئر جاوید احمد لون کو سی سی ڈی،فسٹ،این جی ایچ ای پی تعینات کرکے سنیل کمار کو اضافی چارج سے فارغ کیا گیا جبکہ مذکورہ افسر کو اپنی ذمہ داریوں کے علاوہ آئندہ احکامات تک سی سی ڈی سکینڈ،این جی ہائیڈرل الیکٹرک پروجیکٹ کا اضافی چارج بھی تفویض کیا گیا۔حکم نامہ کے مطابق انچارج ایگزیکٹو انجینئر الطاف مصطفی نحوی کو ایس وی پی کنگن تعینات کیا گیا اور انہیں سی ایم ڈی،اپر سندھ ہائیڈرل پروجیکٹ سکینڈ کا اضافی چارج بھی دیا گیا۔انچارج اسسٹنٹ ایگزیکٹو انجینئر نواب علی کو تبدیل کر کے جی ڈی،یو ایس ایچ پی سمبل تعینات کیا گیا، مذکورہ افسر ای سی ڈی کرناہ کا کام جاری رکھیں گے۔ انچارج اسسٹنٹ ایگزیکٹو انجینئر،ٹیکنکل افسر برائے چیف انجینئر جنریشن کشمیر،دلشاد احمد کائوسہ کو تبدیل کرکے جی ڈ،یو ایس ایچ پی سکینڈ کنگن تعینات کیا گیا۔