پالتو جانوروں کیلئے ربیز مخالف ویکسین کیمپ

سر ینگر//بھیڑ و پشو پالن محکمہ کے پرنسپل سیکریٹری ڈاکٹر اصغر حسن سامون نے اینمل ہسبنڈری کمپلیکس گائو کدل سرینگر میں پالتوجانوروں کیلئے ربیز مخالف ویکسنیشن کیمپ کا افتتاح کیا۔اِس موقعہ پر اُنہوں نے کئی پالتوجانوروں کے مالکان کے ساتھ بات چیت کے علاوہ کئی پالتوجانوروں کو از خود ٹیکے لگائیں ۔ ڈائریکٹر اینمل ہسبنڈری کشمیر ڈاکٹر ایم وائی چاپرو نے جانکاری دیتے ہوئے بتایا کہ اینمل ہسبنڈری محکمہ کی آئی ای سی سیل نے ربیز کے بارے میں جانکاری عام کرنے کے لئے سکولی سطح پر کیمپ متعارف کرنے کی مہم شروع کی ہے ۔ سیکریٹری کو بتایا گیا کہ دُنیا بھر میں ربیز کی وجہ سے تقریباً 60,000 اموات واقع ہوئی ہیں جن میں تقریباً 99فیصد کتوں کے کاٹنے کی وجہ سے واقع ہوئی ہے ۔اُنہیں مزید بتایا گیا کہ ان 60,000اموات میں سے 20,000اموات ہندوستان میں ہوئی ہیں جن میں 40فیصد بچے شامل ہیں۔اِس موقعہ پر اپنے خیالات کا اِظہار کرتے ہوئے ڈاکٹر سامون نے کہا کہ پالتوجانور رکھنے والے لوگوں کو ربیز اور اسے بچائو کے بارے میں ضروری جانکاری دینے کے علاوہ کتوں کی آبادی کو کم کرنے کے اقدامات کئے جانے چاہئیں۔ڈاکٹر سامون نے مرکزی ویٹرنری ہسپتال گائو کدل میں او پی ڈی کے جدید بلاک کا بھی سنگ بنیاد رکھا۔ اُنہوں نے ویٹرنری خدمات میں مزید بہتری لانے کی تلقین کی۔نئے او پی ڈی بلاک کو جدید سہولیات سے لیس کیا جارہا ہے اور ا س کو دو ماہ کے اندر مکمل کیا جائے گا۔بعد میں ڈاکٹر سامون نے نوشہر ہ سرینگر میں ماڈرن شیپ کلینک کا افتتاح کیا۔ اس موقعہ پر ڈائریکٹر شیپ ہسبنڈری اور محکمہ کے دیگر افسران موجود تھے۔ اس کلینک کی تعمیر پر 18.03لاکھ روپے کی لاگت آئی ہے ۔ڈاکٹر سامون نے آئی اے ایچ اینڈ بی پی زکورہ کا دورہ کر کے اس ادارے کے کام کاج کا جائزہ لیا۔اُنہیں بتایا گیا کہ ادارے میں رواں مالی سال کے دوران 8.5لاکھ ایچ ایس، 8.5لاکھ بی کیو اور 7.5لاکھ ایف ڈی سی ویکسین تیار کئے گئے ہیں۔سامون نے بی ایس ایل ۔II لیبارٹری کا بھی دورہ کیا ۔اُنہوں نے ادارے کی مجموعی کام کاج کے معیار کو برقرار رکھنے پر زور دیا۔