پارلیمنٹ کی کارروائی غیر معینہ مدت تک ملتوی

 نئی دہلی// لوک سبھا اور راجیہ سبھاکی کارروائی جمعرات کو غیر معینہ مدت تک ملتوی کر دی گئی۔لوک سبھا کے اسپیکر اوم برلا نے ایوان کی کارروائی شروع ہوتے ہی ایوان کی کارروائی میں تعاون کے لیے تمام اراکین کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ بجٹ اجلاس کے دوران ایوان کی پروڈکٹی وٹی صلاحیت 129 فیصد رہی۔ اجلاس کے دوران 27 نشستیں ہوئیں اور بحث 177 گھنٹے 50 منٹ تک چلی۔انہوں نے کہا کہ صدر رام ناتھ کووند کے 31 جنوری کو پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں سے مشترکہ طور پر خطاب کرنے کے بعد صدر کے خطاب پر 2، 3 اور 7 فروری کو 15 گھنٹے 13 منٹ تک بحث ہوئی اور 7 فروری کو قرارداد کو صوتی ووٹ سے منظور کر لیا گیا۔مسٹر برلا نے کہا کہ وزیر خزانہ نرملا سیتارامن کے پیش کئے گئے بجٹ پر بحث 15 گھنٹے 33 منٹ تک ہوئی۔ گرانٹس کے مطالبات پر بحث تقریباً 13 گھنٹے تک جاری رہی۔ شاہراہوں کی وزارت میں ضمنی مطالباتپر 11 گھنٹے اور وزارت تجارت و صنعت کے گرانٹس کے مطالبات پر طویل بحث ہوئی۔ دیگر تمام وزارتوں کے لیے 23 مارچ کو گیلوٹین منظور کیا گیا تھا۔ادھر راجیہ کی کارروائی آج غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کردی گئی۔اسپیکر ایم وینکیا نائیڈو نے وقفہ صفر کے دوران یہ اعلان کیا۔ بجٹ اجلاس کی شروعات صدر کے خطاب کے ساتھ 31 جنوری سے شروع ہوئی تھی۔