ٹی ٹونٹی میچ کے بعد پاکستان کے حق میں تبصرہ

بھوپال // مدھیہ پردیش میں ٹی 20 ورلڈ کپ میچ کے بعد پاکستان کے حق میں تبصرے کرنے پر غداری کے الزام میں ایک شہری کی گرفتاری عمل میں لائی گئی ہے  ۔ایک عہددار نے بتایا کہ مدھیہ پردیش کے ستنا ضلع میں ایک 23 سالہ شخص کو بغاوت کے الزام میں گرفتار کیا ہے جس نے ٹی 20 کرکٹ ورلڈ کے حالیہ میچ میں پڑوسی ملک کی ہندوستان کے خلاف جیت کے بعد مبینہ طور پر پاکستان کے حق میں تبصرہ کیا تھا۔ وشو ہندو پرشد (وی ایچ پی) کے ستنا ضلع کے سکریٹری انوراگ مشرا اور دیگر کی شکایت پر اتوار کی رات اس شخص کے خلاف میہر پولیس اسٹیشن میں ایف آئی آر درج کی گئی تھی ۔اس شخص کی شناخت 23سالہ محمد فاروق کے طور پر کی گئی ہے۔ اس کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہA ۔124(غداری)، 153.B (قومی یکجہتی کے لیے نقصان )، 504 (امن کی خلاف اکسانے کے ارادے کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ گرفتاری کے بعد فاروق کو پیر کے روز مقامی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں سے اسے جیل بھیج دیا۔ایف آئی آر کے مطابق فاروق نے 24 اکتوبر کو بھارت کے خلاف ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے میچ میں پاکستان کی جیت کے بعد مبینہ طور پر ایک اور فیس بک صارف کی ٹائم لائن پر ’’پاکستان زندہ با‘‘ اور ’بابر اعظم زندہ باد‘ کے تبصرے پوسٹ کئے تھے، جن کی شناخت ساحل خان کے نام سے کی گئی تھی۔ معلوم رہے کہ بابر اعظم ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ چیمپئن شپ میں پاکستانی ٹیم کے کپتان ہیں۔  ایف آئی آر میں کہا گیا کہ شکایت کنندگان کے مطابق ہندوستان کی شکست کے بعد پڑوسی ملک کے حق میں فاروق کی پوسٹ نے محب وطنوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچائی اور وہ غداری کے الزام کے تحت آتا ہے۔گزشتہ ایک ہفتے کے دوران اتر پردیش اور راجستھان میں اسی طرح کے الزامات کے تحت متعدد افراد کو گرفتار یا حراست میں لیا گیا تھا۔