ٹیم انڈیا گلابی گیند سے ٹیسٹ میں اپنی طاقت کا مظاہرہ کرنے اترے گی

ایڈیلیڈ//وراٹ کوہلی کی زیر قیادت ٹیم انڈیا جمعرات کو گلابی گیند سے کھیلے جانے والے پہلے ٹیسٹ میچ میں میزبان آسٹریلیا کو شکست دے کر اپنی طاقت کا مظاہرہ کرنے کے ارادے سے اترے گی۔ ہندوستان اور آسٹریلیا کے درمیان چار ٹیسٹ میچوں پر مشتمل سیریز کا پہلا میچ جمعرات سے ایڈیلیڈ میں کھیلا جائے گا۔ پہلا میچ ڈے نائٹ ہے اور یہ گلابی گیند سے کھیلا جائے گا۔ دونوں ٹیموں کے مابین ون ڈے اور ٹی ٹونٹی سیریز کھیلی جاچکی ہے۔ ون ڈے سیریز کوآسٹریلیا نے 2-1 سے جیت لی تھی جبکہ ٹی 20 سیریز ہندوستان نے 2-1 سے جیت لی تھی۔ ہندوستان اور آسٹریلیا کی ٹیمیں ٹیسٹ میں اپنی طاقت کا مظاہرہ کرنے اتریں گی۔آسٹریلیائی ٹیم آٹھویں مرتبہ گلابی گیند سے کھیلنے اترے گی جبکہ گلابی گیند کے ساتھ ہندوستانی ٹیم کا یہ دوسرا میچ ہے۔ اس سے قبل ہندوستانی ٹیم نے گزشتہ برس بنگلہ دیش کے خلاف گلابی گیند سے ٹیسٹ کھیلا تھا۔ تاہم غیر ملکی سرزمین پر گلابی گیند کے ساتھ ٹیم انڈیا کا یہ پہلا میچ ہے۔ہندوستان نے آخری مرتبہ 2018-19 میں آسٹریلیا کا دورہ کیا تھا اور چار ٹیسٹ میچوں کی سیریز 2-1 سے جیت لی تھی۔ گزشتہ آسٹریلیائی ٹور میں ہندوستانی ٹیم نے ایڈیلیڈ میں جیت حاصل کی تھی اور کنگارو ٹیم کو 31 رنوں سے شکست دی تھی ۔ ٹیم انڈیا اس ریکارڈ کو برقرار رکھنا چاہے گی اور جیت کے ساتھ سیریز کا آغاز کرے گی۔ہندوستانی ٹیم کے حوصلے پچھلے اعدادوشمار کے پیش نظر بڑھیں گے لیکن گزشتہ مرتبہ آسٹریلیائی ٹیم میں اوپنر ڈیوڈ وارنر اور اسٹیون اسمتھ کو شامل نہیں کیا گیا تھا جو اس بار کنگارو ٹیم میں شامل ہیں اور وہ ہندوستان کے لئے پریشانی کا سبب بن سکتے ہیں۔تاہم ، وارنر انجری کے سبب پہلے ٹیسٹ سے باہر ہوگئے ہیں جو ہندوستان کے لئے راحت کی بات ہے۔ وارنر نے پہلے دو ون ڈے میچوں میں زبردست بیٹنگ کی تھی اور ٹیم انڈیا کے بولروں کو بہت پریشان کیا تھا۔ لیکن اس کے بعد وہ زخمی ہوگئے اور اب تک ٹیم میں شامل نہیں ہوسکے ہیں۔منگل کو ان کی کمر میں سوجن کی وجہ سے اسمتھ نے پریکٹس سیشن کو بیچ میں چھوڑ دیا تھا لیکن آسٹریلیائی کپتان ٹم پین نے کہا کہ وہ فٹ ہیں اور توقع ہے کہ وہ پہلے ٹیسٹ میں کھیلیں گے۔ وارنر کی عدم موجودگی میں اسمتھ کا کردار اہم ہوگا۔پہلے ٹیسٹ میں پرتھوی شا اور مینک اگروال پر ٹیم انڈیا کی ابتدائی ذمہ داری ہوگی۔ دریں اثنا زخمی روہت شرما حال ہی میں فٹ ہونے کے لئے آسٹریلیا واپس آئے ہیں اور اگر سب کچھ ٹھیک ہیں تو انہیں آخری الیون میں شامل کیا جاسکتا ہے۔ تاہم ، یہ دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ ٹیم مینجمنٹ تینوں بلے بازوں میں سے کن دو کھلاڑیوں کو آخری الیون میں شامل کرتا ہے۔کپتان وراٹ کوہلی کی بھی ذمہ داری ہوگی کہ وہ ٹیم کو مضبوط اسکور تک لے جائیں۔ وراٹ اس میچ کے بعد وطن واپس آئیں گے ۔