ٹاؤن حال ڈوڈہ میں جے کے آر سی ای اے کی جانب سے سیمینار

ڈوڈہ //جموں کے آر سی ای اے نے ملکی سطح پر تیزی سے پھیلی جارہی فرقہ پرستی و عدم استحکام سے خطہ چناب کو محفوظ رکھنے و مذہبی ہم آہنگی و آپسی بھائی چارہ کی مضبوطی کو وقت کی اہم ضرورت قرار دیا. ڈوڈہ کے ٹاؤن حال میں آل جموں و کشمیر مخصوص زمروں کے اتحاد الائنس نامی ایک غیر سرکاری تنظیم کی طرف سے منعقد سیمینار سے مخاطب ہوتے ہوئے مقررین نے عصر حاضر میں سماج کے اندر پھیلی جارہی بھید بھاؤ و فرقہ وارانہ ماحول کو ملک کی سالمیت کے لئے خطرہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ ہندوستان ایک گلدستے کی مانند ہے جہاں ہر فرقہ کے لوگوں کو جمہوریت نے یکساں حقوق دیئے ہیں۔چناب ویلی میں جے کے آر سی ای اے کے سربراہ جوگیندر رائے نے اس موقع پر بولتے ہوئے کہا کہ سیمینار کا مقصد قومی یکجہتی و آپسی بھائی چارے کی فضا کو قائم رکھنے کا پیغام دینا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پچھلے کئی برسوں سے وہ اس طرح کے پروگرام منعقد کرتے آئے ہیں جہاں پر صرف انسانیت کی قدر، سچائی، انصاف و آپسی بھائی چارہ کو مستحکم بنانے پر زور دیا جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ دفعہ 370 و 35اے کی منسوخی ہم سب کے لئے نقصان دہ ہے۔انہوں نے کہا کہ پہلے ہمارا روزگار و تعلیم محفوظ تھی لیکن اب صرف قوم پرستی فروغ ملا ہے۔انہوں نے حکومت سے ریاست کا درجہ واپس دینے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ بے روزگاری و مہنگائی کے اس دور میں عام آدمی کا جینا محال بن گیا ہے اور تعلیم یافتہ نوجوانوں روزگار کی تلاش میں دردر بھٹک رہے ہیں۔انہوں نے سرکار پر بے روزگاری کے خاتمے و مہنگائی کو دور کرنے کے لئے مثبت اقدامات کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔اس موقع پر مختلف مکاتب فکر کے لوگوں نے شرکت کرکے اپنے خیالات کا اظہار کیا۔