ووٹروںکا اندراج

جموں//سریاستی الیکشن محکمہ تمام اہل ووٹروں کا چنائو فہرست میں اندراج کرانے کی غرض سے 23اور 24فروری 2019 کو صبح 10بجے سے 4بجے تک ریاست بھر میں تمام پولنگ مراکز پر دو روزہ خصوصی کیمپوں کا انعقاد کر رہا ہے۔یہ کیمپ متعلقہ ضلع الیکشن افسروں کی نگرانی میں منعقد ہوں گے اور تمام پولنگ مراکز پر لوگوںکی سہولیت کے لئے بوتھ لیول افسران موجود ہوں گے اور وہ ووٹروں کے اندراج کو یقینی بنائیں گے۔یہ جانکاری آج چیف الیکٹورل آفیسر جموں وکشمیر شیلندر کمار کی طرف سے منعقدہ افسروںکی ایک میٹنگ کید وران دی گئی ۔انہوں نیکہاکہ نئے ووٹروں کا اندراج ایک جاری عمل ہے اور لوگ الیکشن کمیشن کے پورٹل www.nvsp.inپر یہ سہولیت آن لائن حاصل کرسکتے ہیں اور وہ اندراج کے لئے متعلقہ بی ایل او کے ساتھ بھی رابطہ قائم کرسکتے ہیں۔انہوں نے مزید کہاکہ اس کے لئے کوئی حتمی تاریخ مقرر نہیں ہے اور یہ کام کسی بھی دِن کیا جاسکتا ہے۔انہوں نے کہاکہ لوگ چنائو فہرستوں سے متعلق تمام تفصیلات بشمول اخراجات ،جانکاری درج کرنے ، پولنگ سٹیشن میں تبدیلی ،یا کسی بھی دیگر جانکاری کے لئے الیکشن کمیشن کی ہیلپ لائن 1950پر رابطہ قائم کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ یہ ہیلپ لائن ریاست کے تمام ضلعوںمیں چالو ہے ۔انہوں نے نئے اہل ووٹروں سے اپیل کی ہے کہ وہ خصوصی کیمپوں سے استفادہ کر کے اپنے آپ کو ووٹروں کے طور پر اندراج کو یقینی بنائیں ۔ریاست میں آنے والے چنائو عمل میں رائے دہندگان کے بڑھ چڑھ کر شرکت کویقینی بنانے کے لئے سی ای او نے مختلف ذرائع کے ذریعے سے عام لوگوںمیں جامع بیداری پیدا کرنے پر زوردیا ۔ انہوں نے کہا کہ اس کام کے لئے پرنٹ ، الیکٹرانک ، سوشل میڈیا ، موبائیل گاڑیوں ، سمیناروں ، نکڑ ناٹکوں ، پوسٹروں اور دیگر ذرائع کو بروئے کار لایاجانا چاہیئے ۔ انہوں نے ناظم اطلاعات پر زور دیا کہ وہ تمام تر وسائل کو متحرک کر کے عام لوگوں بالخصوص نوجوانوں میں بیداری پیدا کریں۔انہوں نے کہا کہ چنائو کی اہمیت کے بارے میں لوگوں کو روشنا س کرانے کے لئے تعلیمی اداروں ، سماجی تنظیموں ، سرکاری محکموں اور دیگر متعلقین کو بھی شامل کیا جاناچاہیئے ۔انہوں نے کہاکہ چنائو عمل میں لوگوں کی زیادہ سے زیادہ شرکت کو یقینی بنایا جانا چاہیئے اور ایسا کرنا جمہوریت کو بنیادی سطح پر مستحکم کرنے کے لئے لازمی ہے۔ناظم اطلاعات گلزار احمد ڈار ، ڈپٹی ڈائریکٹر اطلاعات راکیش دوبے، شیخ ظہور احمد اور ڈپٹی سی ای او انیل سلگوترہ بھی اس میٹنگ میں موجود تھے۔