وزیر اعظم نے 553 ریلوے سٹیشنوں کی تعمیر نو کا سنگ بنیاد رکھا ماتا ویشنو دیوی ریلوے سٹیشن کو 40کروڑ روپے کی لاگت سے دوبارہ تیار کیا جائے گا:ڈاکٹر جتیندر

 عظمیٰ نیوز سروس

جموں //ایک تاریخی فیصلے میںریاسی ضلع کے کٹرہ شہر میں ماتا ویشنو دیوی ریلوے اسٹیشن کو 40کروڑ روپے کی لاگت سے دوبارہ تیار کیا جائے گا تاکہ موجودہ سہولیات کو بڑھایا جا سکے اور مسافروں کے لئے نئی سہولیات متعارف کرائی جا سکیں۔ یہ قدم امرت بھارت اسٹیشن اسکیم کا حصہ ہے جس کے تحت وزیر اعظم نریندر مودی نے گزشتہ روز ملک بھر میں 19,000 کروڑ روپے سے زیادہ کی لاگت سے 553 ریلوے اسٹیشنوں کی تعمیر نو کا سنگ بنیاد رکھا۔ اس موقع پر مرکزی وزیر ڈاکٹر جتیندر سنگھ نے ایک تختی کی نقاب کشائی کی جس میں ماتا ویشنو دیوی ریلوے اسٹیشن کی باضابطہ تعمیر نو کا نشان ہے۔تقریب کے دوران ڈاکٹر سنگھ نے کہا کہ اس اسٹیشن کو امرت بھارت اسٹیشن اسکیم میں شامل کرنا وزیر اعظم کی خصوصی توجہ اور ترجیح کا عکاس ہے جو انہوں نے اس خطے کی ترقی کے لئے دی ہے۔ انہوں نے یاد دلایا کہ یہ ریلوے اسٹیشن پہلے میں سے تھا جسے وندے بھارت ٹرین کے رول آؤٹ کے لئے منتخب کیا گیا تھا جس میں دوسرا وندے بھارت بھی شامل ہے ۔انہوں نے مزید کہا کہ اسے ملک کا پہلا اسٹیشن ہونے کا اعزاز بھی حاصل ہے جہاں شمسی توانائی کی سہولت کی نقاب کشائی کی گئی تھی۔

 

ڈاکٹر سنگھ نے بتایا کہ آج کی کوشش کے ایک حصے کے طور پر کٹرہ اسٹیشن کے علاوہ تین دیگر اسٹیشنوں یعنی ادھم پور، جموں اور بڈگام، ریلوے اسٹیشنوں کو بھی امرت اسٹیشن کے طور پر دوبارہ تیار کیا جائے گا۔ چار میں سے تین جموں کے علاقے میں ہیں۔ وزیر نے زور دیا کہ اس سے جموں و کشمیر کی ترقی کے لئے وزیر اعظم کے عزم کو تقویت ملتی ہے۔ مرکزی وزیر نے بتایا کہ کٹرہ اسٹیشن ایک انٹر ماڈل اسٹیشن کے طور پر ابھرے گا، جس میں ریل، سڑک اور ہوا کو مربوط کیا جائے گا تاکہ لوگ بغیر کسی رکاوٹ کے ایک موڈ سے دوسرے موڈ میں جا سکیں۔انہوں نے کہا کہ جب سے وزیر اعظم مودی نے ملک کی قیادت سنبھالی ہے، تب سے شہریوں کے ذہنوں میں تبدیلی آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نے ملک کے ہر فرد اور علاقے کی ترقی اور فلاح و بہبود کے لئے برابری کی سطح کو یقینی بنایا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس بات کو یقینی بنایا گیا ہے کہ اس ملک کا ہر شہری اور خطہ اپنی صلاحیتوں اور وسائل کے مطابق اپنی زیادہ سے زیادہ صلاحیتوں تک پہنچ سکے۔ اب غریب آدمی کا بیٹا یا بیٹی بڑے خواب دیکھ سکتے ہیں اور سول سروسز جیسے باوقار امتحانات میں حصہ لے سکتے ہیں اور اقتدار کے گلیاروں میں شامل ہو سکتے ہیں۔امرت بھارت اسٹیشن اسکیم کے تحت ری ڈیولپمنٹ کے لئے چنے گئے 553 ریلوے اسٹیشن 27 ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں پھیلے ہوئے ہیں۔ اسٹیشن شہر کے دونوں اطراف کو مربوط کرتے ہوئے ’سٹی سینٹرز‘ کے طور پر کام کریں گے۔وزیراعظم نے 1500 روڈ اوور برجز اور انڈر پاسز کا سنگ بنیاد بھی رکھااور قوم کے نام وقف کیا۔ ان میں سے ایک 49 کروڑ روپے کی لاگت سے جموں و کشمیر کے مرکز کے زیر انتظام علاقے میں ہوگا۔