وزیراعظم کسان سمان ندھی سکیم

جموں//مرکزی وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ ، ممبرانِ پارلیمنٹ جگل کشور شرما ، شمشیر سنگھ منہاس اور گورنر کے مشیر کے سکندن کی موجودگی میں کنونشن سنٹر کنال روڈ جموں میں منعقدہ ایک تقریب پر پی ایم کسان سکیم متعارف کی گئی ۔ یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ وزیر اعظم نے گورکھ پور سے اس سکیم کو قومی سطح پر متعارف کیا جس دوران چھ ریاستوں کے نامزد مستحقین کسانوں کے حق میں امداد کی پہلی قسط واگذار کی گئی ۔ وزیر اعظم نے کیرلا، کرناٹکا ، اڑیسہ اور مغربی بنگال کے کسانوں کے ساتھ تبادلہ خیال بھی کیا جبکہ گورکھ پور سے من کی بات پروگرام بھی نشر کی گئی ۔ قومی سطح پر اس سکیم کو متعارف کرتے وقت 1.1 لاکھ مستحق کسانوں کے بنک کھاتوں میں 2.21 کروڑ روپے کی رقم منتقل کی گئی ۔ جموں کشمیر میں ریاستی سطح پر 71 ہزار کسانوں کو امداد کی پہلی قسط فراہم کی گئی ۔ اپنے خطاب میں گورنر کے مشیر کے سکندن نے کہا کہ پی ایم کسان ایک متحرک سکیم ہے جس کی مدد سے ملک بھر کے غریب کسانوں کی سماجی و اقتصادی حالت بدل جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ریاست میں ایگریکلچر کو بڑھاوا دینے کی وعدہ بند ہے اور ریاست پی ایم کسان سکیم کو عملانے والی پہلی ریاست بنے گی ۔ ممبر پارلیمنٹ جگل کشور شرما نے کہا کہ اس سکیم کے تحت فراہم کی جانے والی رقم براہ راست بنک کھاتوں میں منتقل کرنے سے رشوت ستانی کو ختم کیا جائے گا ۔ ممبر پارلیمنٹ شمشیر سنگھ منہاس نے اس سکیم کو متعارف کرنے کو دیہی اقتصادیات میں ایک سنگِ میل قرار دیا ۔ اس موقعہ پر کئی مستحق کسانوں کو امداد کے علامتی چیک دئیے گئے ۔ اس موقعہ پر جموں خطے کے کئی کسان بھی موجود تھے جنہوں نے اس سکیم کو متعارف کرنے پر خوشی کا اظہار کیا ۔ تقریب پر ایم ایل سی رومیش ارورہ ، جی ایل رینہ ، وکرم رندھاوا ، سریندر امباردار ، صوبائی کمشنر جموں ، کمشنر سیکرٹری مال ، ڈپٹی کمشنر جموں اور دیگر کئی افسران بھی موجود تھے ۔ بعد میں گورنر کے مشیر کے سکندن نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے ریاست کے تمام اضلاع کے ڈپٹی کمشنروں سے اس سکیم کو متعارف کرنے کے بارے میں تفصیلات طلب کیں ۔ یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ جن کسانوں کے پاس دو ہیکٹر یا اس سے کم زمین ہے اُن کو 6 ہزار روپے سالانہ امداد دی جائے گی جو 2 ہزار روپے کی تین قسطوں میں براہ راست اُن کے بنک کھاتوں میں منتقل کی جائے گی ۔