وزیراعظم کا دورئہ ریاست

جموں//وزیر اعظم کے مجوزہ دورہ ٔ جموں کے پیش نظر وجے پور سانبہ کے علاوہ  دیگر علاقوں میں بھی سیکورٹی انتظامات مزید سخت کر دئیے گئے ہیں۔ منگل کے روز فوج نے سرحدی ضلع سانبہ میںمشتبہ نقل وحرکت کو بھانپتے ہوئے تلاشی مہم شروع کی۔ سرکاری ذرائع کے مطابق مشکوک افراد کی نقل و حمل دیکھے جانے کے بعد بسنتر دریا، رام گڑھ سیکٹر اور متصل علاقوں میں تلاشی مہم شروع کی گئی جس میں فوج، نیم فوجی دستوں اور پولیس نے حصہ لیا تاہم آخری خبریں ملنے تک فوج کوکچھ بھی ہاتھ نہیں لگا۔ واضح رہے کہ نریندر مودی 3فروری کو ریاست کے ایک روزہ دورہ پر آرہے ہیں جس دوران وہ لیہہ جموں اور سرینگر میںمتعدد منصوبوں کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق وزیر اعظم دہلی سے براہ راست لہہ جائیں گے ،8:40پر لہہ پہنچنے کے بعد سنٹرل انسٹی چیوٹ برائے بدھسٹ سٹڈیز میں جا کر وہاںحال ہی میں منظور کی گئی لداخ یونیورسٹی کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔  وزیراعظم وہاں سے 11بجے جموں ہوائی اڈہ پر پہنچنے کے بعد ایک فوجی ہیلی کاپٹر میں شہر سے 25کلو میٹر دور وجے پورجائیں گے جہاں جموں ایمز، شاہ پور کنڈی کنال، جموں اکھنور شاہراہ کی فور لیننگ کا سنگ بنیاد رکھنے کے علاوہ انجینئرنگ کالج کٹھوعہ، آئی آئی ٹی جموں اور جموں روپ وے پروجیکٹ کا افتتاح بھی کریں گے ۔ 12:30بجے وجے پور میں ایک عوامی جلسہ سے خطاب کرنے کے بعد مودی 2:30بجے بادامی باغ سرینگر پہنچیں گے اور جھیل ڈل کا معائینہ کریں گے۔  وزیراعظم کاایمز کشمیر اور آئی آئی ایم کشمیر کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد کشمیر کے منتخب پنچوں سرپنچوں کے ساتھ ملاقات کا پروگرام ہے ۔ شام پانچ بجے وہ بھارتیہ فضائیہ کے خصوصی طیارے میں دہلی روانہ ہو جائیں گے۔