وزیراعظم ترقیاتی پیکیج

 جموں//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیربصیر احمد خان نے اَفسران پر زور دیا کہ وہ وزیر اعظم ترقیاتی پیکیج ، ایس ڈبلیو اے ڈی ای ایس ایچ کے تحت سیاحت کے منصوبوں پر عملدرآمد کا باقاعدگی سے جائزہ لیں اور ان منصوبوں پر بروقت عمل کو یقینی بنانے کے لئے حائل رُکاوٹوں کو دور کریں۔ میٹنگ کے دوران اُنہوں نے بالترتیب این پی سی سی اور این بی سی سی کے ذریعہ انجام دیئے جانے والے ’’ منتلائی ۔ سدھ مہادیو ۔ پٹنی ٹاپ اور گلمرگ ۔بارہمولہ ۔ کپواڑہ ۔لیہہ ‘‘ منصوبوں کی رفتار اور پیش رفت کا جائزہ لیا۔سیکرٹری سیاحت سرمد حفیظ نے عمل آوری ایجنسیوں کے منصوبوں کے بارے میں تفصیلی پرزنٹیشن دی۔مشیر موصوف نے منتلائی ۔ سدھ مہادیو ۔ پٹنی ٹاپ کے منصوبے کے بارے این پی سی سی کو ہدایت دی کہ وہ ڈبل شفٹوں میں کام کرکے پروجیکٹ کو 31 مئی تک مکمل کریں۔ مشیر موصوف کو جانکاری دی گئی کہ این پی سی سی کے تحت منصوبے کے 22 اجزأ میں سے 12 مکمل ہوچکے ہیں۔بصیر خان نے ڈپٹی کمشنر اودھمپور کو ہدایت دی کہ وہ ہر جز کا 10 دن بعد وقتاً فوقتا ًجائزہ لیں اور منصوبوں کی رفتار اور پیش رفت کی نگرانی کریں۔این بی سی سی کے ذریعہ چلائے جانے والے منصوبوں کے بارے میں مشیر نے ہر ایک حصے کو مکمل کرنے کے لئے ٹائم لائن دی اور حکام کو ہدایت دی کہ وہ منصوبے کے تحت تمام اجزأ کی جلد تکمیل کے لئے کاموں کی رفتار میں سرعت لائیں۔این بی سی سی نے مشیر کو جانکاری دی کہ پہلے سے طے شدہ ٹائم لائنوں کے مطابق زیادہ تر منصوبوں پر کام شد و مد سے جاری ہے اور تکمیل کے مختلف مراحل میں ہیں۔ میٹنگ کو بتایا گیا کہ 30 منصوبوں میں سے 10 منصوبے پہلے ہی مکمل ہوچکے ہیں اور اگلے 6 منصوبے جون 2021 تک مکمل ہوجائیں گے۔ مشیرموصوف نے ہدایت دی کہ درنگ ، ماہین اور رفیع آباد میں منصوبوں کو مئی 2021 کے آخیر تک این بی سی سی کے تحت مکمل کیا جائے جبکہ باباریشی ، ہندواڑہ اور خادیمیان کے منصوبے جون 2021ء کے آخیر تک سپرد کیا جائے گا۔این بی سی سی کے ذریعہ مشیر کو مزید بتایا گیا کہ گلمرگ کانووکیشن کمپلیکس کا کام الاٹ ہوچکا ہے اور اس کی تکمیل میں 12 ماہ لگیں گے۔