وارپورہ سوپور میں مسلح تصادم، 2 جنگجو جاں بحق

 سوپور//شمالی کشمیر کے وارپورہ سوپور میں فوج اور جنگجوئوں کے درمیان ہوئے فائرنگ کے تبادلے میں2جنگجو جاں بحق ہوئے۔مقام جھڑپ پر فورسز اور مظاہرین میں شدید تصادم آرائی بھی ہوئی۔جمعرات کی شام 22آر آر، سی آر پی ایف اور پولیس کے خصوصی آپریشن گروپ نے آستان محلہ وار پورہ سوپور کا محاصرہ کیا جس کے دوران یہاں کچھ فائر ہوئے جس کے بعد بستی کے ارد گرد روشنی کا انتظام کیا گیا اور سخت ترین ناکہ بندی کی گئی۔اسکے ساتھ ہی سوپور میں انٹر نیٹ سروس معطل کی گئی۔جمعہ کی صبح سویرے فورسز اور جنگجوئوں کے درمیان شدید جھڑپ ہوئی جس کے دوران دو رہائشی مکانوں کو جزوی نقسان پہنچا جبکہ دو گائو خانے مکمل طور پر تباہ ہوئے۔بعد میں جنگجوئوں کی 2لاشیں بر آمد کی گئیں۔جھڑپ کے ساتھ ہی مقامی لوگ جمع ہوئے اور انہوں نے فورسز کے آپریشن میں رخنہ ڈالنے کی غرض سے پتھرائو کیا، جنہیں منتشر کرنے کیلئے شلنگ کی گئی اور پیلٹ کا استعمال بھی کیا گیا۔ اس دوران متعدد مظاہرین زخمی بھی ہوئے۔مارے گئے جنگجوئوں کی شناخت نہیں ہوسکی۔

لاشوں کے اعضاء برآمد

جھڑپ ختم ہونے کے بعد مقامی لوگوں نے ملبے سے جنگجوئوں کے جسم کے کچھ اعضاء برآمد کئے ۔ پولیس کو جوں ہی اس کے بارے میں معلوم ہوا تو ایک ٹیم یہاں پہنچ گئی جنہوں نے جنگجئوئوں کی ایک لاش کے کچھ اعضاء اور ایک بازو برآمد کئے۔ اس کے بعد پولیس نے انہیں اپنی تحویل میں لیا۔ 

ہڑتال

جمعہ کی صبح سے ہی سوپور ٹائون اور اسکے ملحقہ علاقوں میں مکمل ہڑتال رہی اور ہر طرح کی آمد و رفت معطل رہی۔جھڑپ کے پیش نظر علاقے میں مکمل ہڑتال رہی جس دوران یہاں عوامی، تجارتی اور کاروباری سرگرمیاں ٹھپ ہوکر رہ گئیں۔اس دوران موبائل انٹرنیٹ خدمات کو معطل کردیا گیا۔ جبکہ عوامی احتجاج کو روکنے کے لیے علاقے میں دفعہ 144سی آر پی سی کا نفاذ میں عمل میں لایا گیا۔

پولیس کا بیان

پولیس نے کہا ہے کہ جنگجوشمالی کشمیر کے وار پورہ سوپور علاقے میں چھپے بیٹھے تھے ،تو پولیس اور سیکورٹی فورسز نے مشترکہ طورپر فوراً اس علاقے کو محاصرے میں لے لیا اور اُنہیں ڈھونڈ نکالنے کیلئے کارروائی شروع کی۔ فرار ہونے کے تمام راستے مسدود پا کرملی ٹینٹوں نے حفاظتی عملے پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی ۔ سلامتی عملے نے بھی پوزیشن سنبھال کر جوابی کارروائی کا آغاز کیا اور اس طرح سے طرفین کے مابین جھڑپ شروع ہوئی۔ کچھ عرصہ تک جاری رہنے والی اس جھڑپ میں دو جنگجو ہلاک ہوئے۔ اُن کی شناخت اور تنظیمی وابستگی کے بارے میں جانچ پڑتال شروع کی گئی ہے۔ تصادم کی جگہ اسلحہ و گولہ بارود اور قابلِ اعتراض مواد برآمد کرکے ضبط کیا گیا۔ پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے مزید تحقیقات شروع کی ہے۔ پولیس نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ جائے تصادم پر جانے سے تب تک گریز کیا کریں جب تک اُسے پوری طرح سے صاف قرار نہ دیا جائے کیونکہ پولیس اور دیگر سلامتی ادارے لوگوں کے جان و مال کی محافظ ہے لہذا لوگوں کی قیمتی جانوں کو بچانے کیلئے پولیس ہر ممکن کوشش کرتی ہے۔