وادی کے اعلیٰ ترین ہسپتال ’ سکمز صورہ ‘میں طبی عملہ کی 50فیصد اسامیاں خالی فیکلٹی کی 115، ٹیکنیشین کی 175، ٹیکنالوجسٹ کی 106اور ٹیکنیکل افسروں کی 30اسامیاںبھی شامل

 پرویز احمد

سرینگر //شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ میں پچھلی 2دہائیوں میں پروفیسروں، ایسوسی ایٹپروفیسروں ، اسسٹنٹ پروفیسروں اور دیگر نیم طبی عملہ کی تقرریاں نہ ہونے کی وجہ سے ہسپتال میں عملہ کی 50فیصد سے زائد اسامیاں خالی پڑی ہیں۔ سکمز میں فیکلٹی کی 115، ٹیکنیشین کی 175، ٹیکنالوجسٹ کی 50، ٹیکنیکل افسروں کی 30، سیلیکشن گریڈ ٹیکنالوجسٹ کی 56اسامیاں سمیت دیگر عملے کی اسامیاں خالی پڑی ہیں اور عملہ کی کمی کا خمیازہ مریضوں اور تیمارداروں کو قطاروں میں گھنٹوں کھڑے رہ کر چکانا پڑتا ہے۔

 

سکمز انتظامیہ کی جانب سے فراہم کی گئی جانکاری میں بتایا گیا ہے کہ طبی اور نیم طبی عملی کی 979اسامیاں منظور شدہ ہیں جن میں سے 450جگہیں خالی ہیں۔ پروفیسروں، ایسوسی ایٹ پروفیسروں اور اسسٹنٹ پروفیسروں کی 290اسامیاں منظور شدہ ہیں جن میں سینئر ڈاکٹروں کی 115اسامیاں خالی پڑی ہیں۔ ریذیڈنٹ میڈیکل افسروں کی 8اسامیاں منظور شدہ ہیں جن میں 6خالی ہیں، ماہر امراض زچگی کی ایک، اینڈرولوجسٹ کی ایک، کنیکل ایمبریولوجسٹ (Clinical Embryologist) کی ایک، اور پروگرام کارڈنیٹر کی ایک ایک اسامی منظور شدہ ہیںاور یہ سبھی اسامیاں خالی پڑی ہیں۔ سکمز میں مریضوں کو متوازن غذاء فراہم کرنے کیلئے نیوٹریشن ایجوکیشنسٹ(Neutrition educationist) کی 10اسامیاں منظور شدہ ہیں جن میں 7خالی ہیں۔ ٹیکنیکل افسروں کی 33اسامیوں میں 30 اسامیاں خالی ہیں، ٹیوٹر کی 16اسامیوں میں 14خالی ہیں، سلیکشن گریڈ ٹیکنالوجسٹ کی 77اسامیوں میں 50خالی ہیں جبکہ ٹیکیشنین کی 258اسامیوں میں 175خالی پڑی ہیں۔ لیبارٹری اسسٹنٹ کی 46اسامیوں میں 7 جبکہ پوسٹ مارٹم اسسٹنٹ کی 4 منظور شدہ اسامیاں سبھی خالی پڑی ہیں۔ خالی پڑی ان اسامیوں کے علاوہ سکمز میں بلڈ ٹرینسفوژن شعبہ میں ایک، ڈینٹل یونٹ میں ایک،شعبہ میڈیسن اور متعلقہ خدمات میں 29، شعبہ سرجری میں 14، نیوکلئیر میڈیسن میں 3، فارمیکولوجی میں 2، لیور ٹرانسپلاٹ یونٹ میں 4اور جونیئر ریذیڈنٹ ڈاکٹروں کی 15اسامیاں خالی پڑی ہیں۔میڈیکل سائنسز کے ڈائریکٹر ڈاکٹر پرویز احمد کول نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سینئر ڈاکٹروں مثلاً ایسوسی ایٹ پروفیسر اور پروفیسر کی اسامیاں ترقی دیکر ہی پر کی جاسکتی ہیں جبکہ دیگر اسامیوں کیلئے بھرتی عمل شروع کیا گیا ہے ۔