وادی کو نیلام کرنے کی پوری تیاری

نیوز ڈیسک
سرینگر//مشترکہ مزاحمتی قیادت سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یٰسین ملک نے کہا ہے کہ ریاستی عوام کو ان کی مرضی کے خلاف انتخابی ڈرامہ بازی میں گھسیٹ کر فوجی دباؤ کو استعمال میں لایا جارہا ہے ۔حیدر پورہ میں ایک اجلاس میں صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔مزاحمتی قیادت نے ریاست جموں کشمیر کو حاصل آئین ہند میں دی گئی ضمانتوں سے انحراف کرتے ہوئے بھارت کی انتظامیہ کی طرف سے مسلم اکثریتی کردار، اسٹیٹ سبجیکٹ قانون، آبی وسائل، قدرتی ذخائر، بجلی پروجیکٹ، جنگلات اور قدرتی حسن کو نیلام کرنے کی پوری تیاریاں کی گئی ہیں۔ مزاحمتی قیادت نے بجلی پروجیکٹوں کو بھارت کی نجی کمپنیوں کو نیلام کرنے کی بہیمانہ کارروائی سے یہاں کے لاکھوں بجلی ملازمین کو بے روزگار کرنے کی ایک بھونڈی سازش قرار دیتے ہوئے عام لوگوں کو اس جابرانہ کارروائی کے خلاف سڑکوں پر آنے کے لیے تیار رہنے کی اپیل کی ہے۔ گلمرگ میں فوجی اغراض ومقاصد کے لیے ہیلی پیڈ قائم کرنے کے علاوہ دیگر صحت افزا مقامات پر فوجی چھاونیاں قائم کرنے کے لیے ہزاروں ایکڑ رقبے پر پھیلے ہوئے جنگلات کا کٹاو، یہاں کے ماحولیات اور قدرتی حُسن کو تہس نہس کرنے کی مذموم سازش ہے۔مزاحمتی قیادت نے ہماچل پردیش، اتر پردیش اور بھارت کی دیگر ریاستوں میں کشمیری دستکاروں اور چھوٹی تاجربرادری کو تعصب اور نفرت کا شکاربناتے ہوئے بدترین قسم کی انتقام گیرانہ پالیسی ہے جسے اگر فوراً روکنے کی کوشش نہ کی گئی تو اس کے بھیانک نتائج نکل سکتے ہیں۔