وادی میں کڑاکے کی شبانہ ٹھنڈکا زور|| سرینگر میں پارہ منفی 4.6 آنے والے ایام میں پارہ مزید گریگا،16دسمبر تک کوئی موسمیاتی تبدیلی نہیں ہوگی

 عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر// سرینگر نے سنیچر کو موسم کی سرد ترین رات کا تجربہ کیا، جہاں کم از کم درجہ حرارت نقطہ انجماد سے نیچے منفی 4.6 ڈگری سیلسیس پر پہنچ گیا۔محکمہ موسمیات سرینگر کے ڈائریکٹر ڈاکٹر مختار احمد نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ اگلے کئی روز تک درجہ حرارت میں بدستور کمی ہوگی اور اس دوران رات کو کورا بھی جمے گا۔انکا کہنا تھا کہ دسمبر کے مہینے میں کم سے کم درجہ حرارت منفی 7تک بھی گیا ہے لہٰذا درجہ حرارت میں تنزلی کوئی نئی بات نہیں ہے۔

ڈائریکٹر نے کہا کہ اس سال چلہ کلاں سے قبل ہی شبانہ درجہ حرارت میں کمی آنے سے 21دسمبر کے بعد کی کیفیت محسوس ہونے لگی ہے اور آئندہ کئی روز تک موسم خشک رہنے کے نتیجے میں رات کو کورا ہی لگے گا اور جل بھی جمنے کا امکان ہے۔انہوںنے کہا کہ 9اور 10دسمبر کیلئے موسم بدستور خشک رہیگا۔11اور 12دسمبر کو مجموعی طور پر مطلع ابر آلواور 13سے 16دسمبر کے دوران بھی موسم بیچ بیچ میں ابر آلود اور خشک رہیگا۔ انہوں نے کہا کہ اس دوران کوئی بڑی موسمیاتی تبدیلی آنے کا کوئی امکان نہیں ہے۔البتہ اگلے چند روز میں رات کی ٹھنڈ میں اضافہ ہوگا اور د ن کا درجہ حرارت بھی قدرے کم ہوگا۔انہوں نے کہا کہ صبح و شام دھند کی صورتحال بھی برقرار رہے گی اور جہاں پانی نزدیک ہوگا، وہاں گہری دھند چھائی رہے گی۔ انہوں نے بتایا کہ جموں و کشمیر کی گرمائی دارالحکومت میں جمعہ کی رات ریکارڈ کیا گیا درجہ حرارت جمعرات کی رات منفی 2.4 ڈگری سیلسیس سے دو درجے نیچے تھا۔انہوں نے بتایا کہ سرینگر کا درجہ حرارت اس سیزن میں اب تک کا سب سے کم درجہ حرارت ہے۔ پہلگام وادی کشمیر کا دوسراسرد ترین مقام تھا۔جہاںدرجہ حرارت منفی 5 ڈگری رہا۔شوپیان میں درجہ حرارت منفی 5.9 ریکارڈ کیا گیا جو سب سے زیادہ سرد ترین جگہ رہی۔ انہوں نے بتایا کہ گلمرگ میں منفی 4.2 ،قاضی گنڈ میں منفی 2.8 ،کوکر ناگ میں منفی 2.3،اننت ناگ میں منفی 4.3،گاندربل میں منفی 3.3پلوامہ میں منفی 4.7بانڈی پورہ میںمنفی 4.3بارہمولہ میں منفی 3.8،بڈگام میںمنفی3.5،کولگام میں منفی 1.9اور کپواڑہ میں منفی 3 ڈگری سیلسیس ریکارڈ کیا گیا۔