وادی میں نئے زمانے کی ہٹلریت:ملک

 سرینگر //لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے کہا ہے کہ قتل و غارت گری ، قید و بند کے دروازے وا رکھنے،رہائشی مکانات کو بارود لگاکر اُڑانے،آگ و آتش کی نذر کرنے یا توڑ پھوڑ کا نشانہ بنانے،کریک ڈائون کے نام پر پیر و جوان ،بزرگ و بچوںاور خواتین کی مارپیٹ، ٹارچر اور تذلیل کرنے کے جاری واقعات جمہوریت کی آڑ میں نئے زمانے کی ہٹلریت ہے۔ملک نے کہا کہ بھارتی نوآبادیاتی ذہن کی حامل فوج، فورسز اور حکام نے آپریشن آل آؤٹ کے تحت روزانہ کی بنیاد پر کشمیری معصوم جوا ن بے دردی کے ساتھ تہہ تیغ کئے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بھارتی استعمار کی جانب سے کئے جانے والے یہ مظالم و مجابردراصل نئے زمانے کی ہٹلریت ہے جسے نام نہاد جمہوریت کا لبادا اوڑھ کر کشمیر میں نافذ کیا گیا ہے تاکہ کشمیریوں کی آزادی کی آواز کو دبایا جاسکے۔ملک نے کہا کہ کل ہی پلوامہ کے گائوں ٹنگہ ہار میں میںایک خاتون فضی بیگم زوجہ غلام حسن فوج کی ہڑبھونگ سے گھبرا کر ہارٹ اٹیک کا شکار ہوئی۔ اس کے گھر والوں نے فوجیوں سے اُسے ہسپتال منتقل کرنے کی درخواست کی لیکن فوج نے تب تک اُسے ہسپتال جانے کی اجازت نہیں دی جب تک کہ وہ دم توڑ گئیں۔