وادی میں عرس حضرت غوث العظمؒ کی تقریبات کا سلسلہ جاری

سرینگر// عرس مبارک حضرت پیران پیر غوث العظم حضرت سید عبدالقادر جیلانیؒ کی تقریب کے سلسلے میں تاریخی خانقاہِ معلی میں تقریب منعقد ہوئی جہاں وادی کے اطراف و اکناف سے آئے ہوئے عقیدتمندوں نے شرکت کی۔ نماز جمعہ کے بعد خطمات المعظمات، دورد و ازکار اور اودارد خوانی کی مجالس آراستہ ہوئی اور ایسی ہی تقریبات خانیار شریف ،درگاہ غوثیہ رہباب صاحب عالی کدل ، دستگیر صاحب سرائے بالا ، پنجورہ شوپیان، جناب صاحب صورہ ، نادی ہل بانڈی پورہ، بانہال، رفیع آباد ، سوپور ، ڈورو شاہ آباد، ترال، وچی ، کھاگ ، سیر ہمدان اور دیگر زیارت گاہوں میں بھی منعقد ہوئیں۔ قدیم خانقاہِ جامع پانپور میں نمازِ جمعہ سے قبل تقریب پر میر واعظ کشمیر مولانا ریاض احمد ہمدانی نے حضرت محبوب سبحانی شیخ عبدالقادر جیلانیؒ کی پاک سیرت ، علمی اور روحانی کمالات پر واعظ تبلیغ فرماتے ہوئے کہا کہ شاہ جیلانؒ نے اسلام کی جو آبیاری تبلیغ واشاعت اور اُن کے تاریخی اسلامی کارنامے ، روحانی اور علمی کمالات عالم اسلام کی تاریخ میں ایک سنہری باب ہے اور اُن کی تعلیم قرآن وحدیث پر مبنی اور ہمارے لئے مشعل راہ ہے۔ادھر شیخ سید عبدالقادر جیلانیؒ کے سالانہ عرس مبارک پر میرواعظ کشمیر مولانا ریاض احمد ہمدانی 8ماہ ربیع الثانی مطابق 14نومبر اتوار 12بجے دن کے بعد وعظ و تبلیغ فرمائیں گے ۔ یاد رہے میرواعظ ہمدانی ادارہ اوقافِ اسلامیہ پیردستگیر صاحبؒ کی دعوت پر بقعہ عالیہ میں تشریف فرما ہونگے۔ 
 
 

خانقاہ فیض پناہ ترال میں تقریب منعقد،

حضرت شاہ ہمدان ؒ کے تبرکات کی نشاندہی کرائی گئی

سری نگر//یو این آئی// جنوبی ضلع پلوامہ کے خانقاہ فیض پناہ ترال میں جمعہ کو تبرکات کی نشاندہی کرائی گئی جس دوران عقیدتمندوں کی ایک بڑی تعداد فیض یاب ہوئی ۔مولانا شبیر احمد شاہ نے اس موقع پر مختصر خطاب کے دوران حضرت امیر کبیر میر سید علی ہمدانیؒ کے اسوۃ حسنہ پر روشنی ڈالی ۔انہو ں نے عقیدتمندوں پر زور دیا کہ وہ اسلامی اصولوں کو اپنا لیں تاکہ دنیا و آخرت میں وہ سرخ رو ہو سکیں۔یہاں یہ امر قابلِ ذکر ہے کہ مسلسل تین سال تک ترال میں حضرت امیر کبیر میر سید علی ہمدانیؒ کا سالانہ عرس پاک نہیں منایا گیا جس کے باعث زائرین اضطرابی کیفیت میں مبتلا تھے ۔چنانچہ خانقاہ فیض پناہ ترال کی انتظامیہ نے ایک جرائت مندانہ فیصلہ لیتے ہوئے نماز جمعہ کے بعد تبرکات کی نشاندہی کرائی جس دوران رقعت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے اور ترال کی فضا اللہ اکبر کے نعروں سے گونج اُٹھی۔انتظامیہ نے زائرین کی سہولیات کیلئے خاطر خواہ انتظامات کئے تھے جبکہ تبرکات کی نشاندہی کے دوران کووڈ رہنما اصولوں پرسختی کے ساتھ عملدرآمد کیا گیا۔