وادی میں بجلی کے بنیادی ڈھانچے کو 60 فیصد نقصان| بحالی کا کام جاری| بعد دوپہر تک بحالی کا امکان: محکمہ بجلی

 
 
سری نگر//پوری وادی کشمیر میں رات بھر ہونے والی شدید برف باری سے سری نگر سمیت وادی کے بیشتر علاقوں میں بجلی سپلائی منقطع ہو کر رہ گٸی ہے۔
 
تفصیلات کے مطابق ٹرانسمیشن لائنوں اور کھمبوں کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا ہے۔
 
کشمیر پاور ڈسٹری بیوشن کارپوریشن لمیٹڈ کے چیف انجینئر اعجاز احمد ڈار نے کہا کہ تازہ برف باری کی وجہ سے کشمیر بھر میں کم از کم 60 فیصد نقصان ہوا ہے۔
 
انہوں نے کہا کہ بجلی بحال کرنے کے لیے افراد اور مشینری کو کام پر لگا دیا گیا ہے۔ تاہم، انہوں نے کہا کہ بحالی کا عمل دوپہر 02:00 بجے تک مکمل ہونے کا امکان ہے۔
 
ڈار نے مزید کہا کہ برف باری سے بڑے پیمانے پر نقصان کی وجہ سے جنوبی علاقوں میں بحالی میں تھوڑا وقت لگے گا۔
 
انہوں نے کہا کہ ہم نے بحالی کا عمل شروع کر دیا ہے اور دوپہر 02 بجے تک بجلی بحال کرنے کا ہدف مقرر کیا ہے۔
 
واضح رہے کہ جموں و کشمیر کے گرمائی دارالحکومت سری نگر سمیت کشمیر کے علاقے آج صبح سے ہی تاریکی میں ڈوبے ہوئے ہیں۔
 
کشمیر کے حصوں میں منگل کی شام سے تازہ برفباری ہوئی، جس سے پوری وادی میں درجہ حرارت منفی ہو گیا۔
 
تازہ برف باری کے نتیجے میں سری نگر جموں شاہراہ بھی بند ہو گئی ہے اور سری نگر بین الاقوامی ہوائی اڈے سے آنے اور جانے والی پروازیں منسوخ کر دی گئی ہیں۔