وادی میں ابر کرم سے فصل بہاراں کو نئی زندگی ملی

 سرینگر+کپوارہ+اوڑی // بارش نے فصل بہاراں کو جہاں نئی زندگی دی ہے، وہیںکپوارہ  اورسونہ مرگ میںپہاڑیاں سفیدچادرمیں لپٹ گئیں ہیں ۔ادھر اوڑی میںبرق گرنے سے 16 سو سال کی قدیم زیارت گاہ خاکستر ہوئی۔شہر سرینگر میں بدھ کی صبح سے ہی ابر کرم برستا رہا اور دوپہر تک یہی صورٹھال رہی، البتہ اس میں شدت نہیں تھی۔شمالی کشمیرکے تینوں اضلاع بارہمولہ ،بانڈی پورہ اورکپوارہ کے میدانی اوربالائی علاقوں میں پوری رات تیزبارشیں ہوتی رہیں ،اوریہ سلسلہ جمعرات کوصبح تک جاری رہا۔ ضلع بڈگام اورگاندربل کے میدانی اوربالائی علاقوں میں متواتربارشوں کے ساتھ ساتھ کچھ بالائی مقامات پرتازہ برف باری بھی ہوئی ۔دونوں اضلاع کے بیشترعلاقوں میں بھی بارشوں کاسلسلہ منگل کورات دیرگئے شروع ہونے کے بعدپوری رات جاری رہا۔ اسلام آباد،کولگام ،شوپیان اورپلوامہ اضلاع کے بیشترمیدانی اوربالائی علاقوں میں بھی منگل کورات دیرگئے اوربدھ کوعلی الصبح بارشوں کاسلسلہ شروع ہواجومتواتر کئی گھنٹوں تک جاری رہا۔اس دوران سونہ مرگ اورزوجیلادھرے پرتازہ برف باری ہونے کے بعدنزدیکی پہاڑیاں سفیدچادرمیں لپٹ گئیں ۔معلوم ہواکہ زوجیلادھرے اورسونہ مرگ میں بالترتیب7اور4انچ برف جمع ہوئی ۔اشرف چراغ کے مطابق کرناہ تحصیل میں پچھلے تین روز سے جاری بارشوں اور پہاڑی علاقوں میں برف باری کے نتیجے میںعام زندگی مفلوج ہو کر رہ گئی ہے اس دوران کرناہ کپوارہ شاہراہ سمیت ٹیٹوال ٹنگڈار سڑک بھی گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے احتیاطی طور پر بند کر دی گئی ہے ۔نستہ چھن گلی پر تازہ برف باری کے نتیجے میں ضلع انتظامیہ نے سڑک کو موسم خوشگوار ہونے تک بند کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔پچھلے دو روز سے شاہراہ پر کسی بھی گاڑیوں کو چلنے کی اجازت نہیں دی گئی ہے ۔ نستہ چھن گلی پر تازہ برف باری اور بارشوں سے شاہراہ پر پسیاں اور پتھر گر آئے ہیں ۔ ٹیٹوال ٹنگڈار سڑک بھی گاڑیوں کی آمد ورفت کیلئے بند ہو گئی ہے ۔بتایا جاتا ہے کہ سکھ برج کے مقام پر بارشوں کی وجہ سے سڑک پر پسیاں گر آئی ہیں ۔بدھ کی شام تک نستہ ژھن گلی (سادھناٹاپ ) پر2،مژھل کی زید گلی پر 2اور فرکیا ں گلی پر 2فٹ سے زائد برف ریکارڈ کی گئی۔ظفر اقبال کے مطابقسرحدی علاقہ اوڑی میں لائن آف کنٹرول (ایل او سی) کے گھرکوٹ گائوں میں گذشتہ رات آتشزدگی کی ایک واردات میں سوسالہ قدیم آستان عالیہ بابا فریدؒ کو شدید نقصان پہنچا۔مقامی لوگوں نے بتایا کہ آستان شریف میں آگ برق گرنے سے لگی ۔لوگوں کا کہنا ہے کہ مذکورہ آستان کے ساتھ ایل او سی کے دونوں طرف رہائش پذیر لوگ عقیدت رکھتے ہیں۔بابا فریدؒ آستان عالیہ کے بالائی حصہ میں آگ نمودار ہوئی جس نے آناً فاناً پورے ڈھانچے کو اپنی گرفت میں لے لیا۔ انہوں نے بتایا کہ آتشزدگی کی اس واردات میں آستان عالیہ کو بڑے پیمانے پر نقصان پہنچا۔ آستان شریف کو ہوئے نقصان سے اہلیان اوڑی میں صدمے کی لہر پھیلی ہوئی ہے۔ادھر وادی بھرمیں تازہ بارشوں کے نتیجے میں خوشگوارموسم بہاراورفصلوں ،پھلوں اورسبزیوں کی بہترپیداوارہونے کی اُمیدپیداہوگئی ہے۔زمینداروں اورمالکان باغات نے بتایاکہ تازہ بارشوں سے پیداواری زمین ،باغات اورکھیت کھلیان ترہوگئے جوکہ آنے والے خریف سیزن کیلئے اچھاثابت ہوگا۔