نیشنل کانفرنس وفد پسماندہ طبقہ جات کے کمیشن سے ملاقی

سرینگر//نیشنل کانفرنس کے اعلیٰ سطحی وفد نے جموں و کشمیر سماجی و تعلیمی لحاظ سے پسماندہ طبقہ جات کے کمیشن کیساتھ ملاقات کی۔ وفد کی سربراہی صوبائی سکریٹری شوکت احمد میر کررہے تھے جبکہ اُن کے ہمراہ پارٹی کی پہاڑی سیل کے کنوینئر اور کارڈی نیٹر سید رفیع شاہ اور نائب صدر صوبہ سید توقیر احمد تھے۔ یاد رہے کہ کمیشن نے سیاسی جماعتوں سے مذکورہ پسماندہ طبقہ جات کے مفادات کے تحفظ کیلئے سفارشات کے علاوہ نوکریوں اور تعلیم میں ریزرویشن کیلئے آراء طلب کی تھیں۔ وفد نے کمیشن کیساتھ سماجی و تعلیمی لحاظ سے پسماندہ طبقہ جات کی فلاح و بہبود سے متعلق مختلف معاملات پر غور و خوض کیا اور کمیشن کو سفارشات بھی پیش ہیں۔ وفد نے کہا کہ چوپان اور کمہار طبقہ انتہائی پسماندہ ہے ، ان کی زندگی کا معیار بہتر بنانے کیلئے حکومتی سطح پر کارگر اور ٹھوس اقدامات کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کمیشن سے کہا کہ چوپان اور کمہار طبقہ کے لوگوں کیلئے تعلیم اور نوکریوں میں ریزرویشن رکھی جائے تاکہ ان کی زندگی کا معیار بہتر بنایا جاسکے۔ اس کے علاوہ وفد نے پہاڑی بولنے والوں کیلئے بھی ریزرویشن کی سفارش کرتے ہوئے کہا کہ یہ طبقہ کافی دیر سے اس بات کی مانگ کرتے آرہے ہیں ، حالانکہ نیشنل کانفرنس نے کئی بار پہاڑی بولنے والوں کیلئے ریزرویشن کی کوشش کیں اور اس سلسلے میں مرکزی کمیشن برائے درج فہرست قبائل کیساتھ بھی یہ معاملہ اُٹھایا تھا۔ اس کے علاوہ نیشنل کانفرنس نے دیگر پسماندہ اور غریب طبقوں کے بھی خصوصی مراعات دینے کی مطالبہ کیا۔ پارٹی نے اُمید ظاہر کی کہ اُن کی سفارشات کو حتمی رپورٹ میں شامل کیا جائے گا۔ یا درہے کہ کمیشن کو 2سال کے اندر اندر اپنے رپورٹ پیش کرنی ہے